سینے میں میرے قلب مچلتا رہتا ہے

Poet: Sobiya Anmol
By: Sobiya Anmol, Lahore

سینے میں میرے قلب مچلتا رہتا ہے
موم کی طرح ہر وقت پگھلتا رہتا ہے

مبتلا ہے یہ آج بھی اُس ماضی میں
یاد کرتا رہتا ہے ٗ تڑپتا رہتا ہے

لوگ مسکراتے اِس کے آس پاس
یہ منہ اُٹھا کے دیکھتا رہتا ہے

حسرت کرتا ہے جینے کی مگر
جیتا نہیں ٗ سوچ سوچ کے مرتا رہتا ہے

بے زبان ہے اُس کے سامنے آتے ہی
تنہائی میں کسی سے کچھ کہتا رہتا ہے

دیوانہ سا ہے پہلے دن ہی سے
نامانوس سے رستوں پر بھٹکتا رہتا ہے

پھولوں کو چُھو چُھو کے دیکھتا ہے
بھری بھیگی برسات میں جلتا رہتا ہے

Rate it:
12 Dec, 2018

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: sobiya Anmol
what can I say,people can tell about me... View More
Visit 128 Other Poetries by sobiya Anmol »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City