یہ درد تو آنکھوں سے ہربار جھلکتا ہے

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

یہ درد تو آنکھوں سے ہربار جھلکتا ہے
وہ درد کی صورت ہی مرے دل میں ابلتا ہے

دنیا میں رہو لیکن دنیا نہ رہے دل میں
انسان کے غم میں جو آنکھوں سے چھلکتا ہے

ذہنوں کے مراسم تھے اک ساتھ بھی ہو جاتے
جائے نہ مگر دل سے اِک پیار نکلتا ہے

آواز سماعت تک پہنچی ہی نہیں شاید
وہ ورنہ تسلی کو کچھ دیر دہکتا ہے

جب آئینے میں صورت دھندلی سی دکھائی دے
پھر دھول کی وادی سے انسان دمکتا ہے

اس میری زمیں پہ اب یہی درد کہانی ہے
کچھ قصے ہیں ماضی کے ، کچھ لوگ کڑکتا ہے

اک روز تو لوٹیں گے وشمہ تری گلیوں میں
آئیں گے قسم سے ہم ترا پیار چمکتا ہے

Rate it:
22 Dec, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: washma khan washma
I am honest loyal.. View More
Visit 4523 Other Poetries by washma khan washma »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City