مزاج

Poet: م الف ارشیؔ
By: Muhammad Arshad Qureshi (Arshi), Karachi

میرے مزاج کو بھی یاں سمجھا کرے کوئی
مجھ کو بھی راز اپنے بتایا کرے کوئی

حسرت رہی کہ کوئی چلے میرے ساتھ بھی
مڑ کے مجھے بھی بارہا دیکھا کرے کوئی

اس نے کہا تھا ساتھ نبھائیں گے عمر بھر
رستے میں چاہے خار بچھایا کرے کوئی

بس میں ہی جانتا ہوں جو مجھ پر گذر گئی
میرے بھی دل کے درد کو سمجھا کرے کوئی

ہوتے ہوئے جدا میں بھی اتنا ہی کہہ سکا
آخر بتاؤ تم کہ کیا کیا کرے کوئی

تاروں کو توڑ لایں گے ہم آسمان سے
اس طرح تو نہ ہم سے یہ وعدہ کرے کوئی

یوں ریزہ ریزہ کردیا کیوں میری ذات کو
مجھ کو سمیٹ کر کبھی رکھا کرے کوئی
 

Rate it:
03 Jan, 2019

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Muhammad Arshad Qureshi
My name is Muhammad Arshad Qureshi (Arshi) belong to Karachi Pakistan I am
Freelance Journalist, Columnist, Blogger and Poet.​President of Internati
.. View More
Visit 180 Other Poetries by Muhammad Arshad Qureshi »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City