سے روزے سے نفل نمازاں ، سے سجدے کر کر تھکّے ہو
Poet: Sultan Bahoo
By: fahmida, lhr

سے روزے سے نفل نمازاں ، سے سجدے کر کر تھکّے ہو
سے واری مکے حج گزارن دل دی دوڑ نہ مکّے ہُو
چلے چلیئے ،جنگل بھوناں ، اس گل تھیں نہ پکے ہُو
سبھے مطلب حاصل ہوندے باہو جد پیر نظر اک تکے ہُو

سینکڑوں روزے ،ہزاروں نوافل اور سجدے کر کر تھک گئے
سو بار مکے جا کر حج بھی کیا مگر دل بے قرار کی بھاگ دوڑ ختم نہ ہوئی
چلّے کئے ، جنگل گھومے لیکن مراد حاصل نہ ہوئی
باہو سارے مطلب حاصل ہو جاتے ہیں جب پیر اک نظر دیکھتا ہے

Rate it: Views: 18 Post Comments
 PREV More Poetry NEXT 
 More Sultan Bahoo Poetry View all
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 06 Feb, 2019
About the Author: Owais Mirza

Visit Other Poetries by Owais Mirza »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
These all are very interesting poetries that I can read that usually from this way because mention the every poetry give us the many lessons
By: harib, karachi on Feb, 09 2019
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.