امی

Poet: Ijaz Kashmiri
By: Ijaz Kashmiri, China

آنکھیں پھر سے کیوں ہیں لال امّی
پھر کس بات کا ملال امی

جانے والے لوٹتے کہاں ہیں
کیوں ہو آج پھر نڈھال امّی

زندگی کے یہ ایسے مت گزاریں
باقی جو ہیں ماہ و سال امّی

عظمٰی، عائشہ بھی اور مریم
جب ہیں،ہو کیوں پھر بے حال امّی

خوش رہ سکتا ہوں میں گر رہیں آپ
کر دیں نا یہ بھی کمال امّی

بالکل بھی نہیں ہے اچھا یہ جو
رکھا ہے بنا کے حال امّی

بہتر ہے یہ، لائیں ذِہن میں اب
خوش رہنے کا کوئی خیال امّی

خوش خوش آپ ہوں میں جب بھی دیکھوں
کوئی نہ رہے سوال امّی

دیکھا نہ تھا غم کا شائبہ تک
کر لیے کیسے اب حلال امّی

ہم سب کے لیے خوش رہ کے ہی اب تو
قائم کر ہی دیں مثال امّی

ہم بے نُور ہو نہ جائیں کہ آپ
ہم سب کا ہی ہیں جمال امّی

اب اعجاز بھی ہے ملتمس کہ
غم کا نہ ہو احتمال امّی

Rate it:
07 Feb, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Ijaz Kashmiri
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City