کار مسیحائی انجام دو

Poet: ڈاکٹر فیضان قیصر
By: Faizan, Karachi

کاش! ایسا کبھی ہو مرے دیس میں
لوگ نکلیں گھروں سے یہ کہتے ہئے
آج اپنے مسیحاؤں کے واسطے
ہم ہمارے گھروں سے نکل آئے ہیں
اور سڑکوں پہ بیٹھے مسیحاؤں سے
لوگ بولیں سنو
ہم تمھاری جگہ دینگے دھرنا یہاں
اسپتالوں میں لوٹ جاؤ تم وہاں
منتظر ہیں تمھارے کئ غمزدہ
ہیں ملول و پریشاں دکھی بے خطا
صبح نو کا انھیں جاکے پیغام دو
جاؤ کار مسیحائی انجام دو

Rate it:
16 Feb, 2019

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Faizan
Visit Other Poetries by Faizan »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City