آج کچھ نیا کر دے

Poet: نعمان صدیقی
By: Noman Baqi Siddiqi, Karachi

ساتھ اس کا سدا کر دے ، آج کچھ نیا کر دے
ہو جائے وہ میرا بس ، پوری میری دعا کر دے

پھول کا گلدستہ ہے ، مجھ سے وہ وابستہ ہے
عرض ہے یہ غرض ہے ، اسے میری شفا کر دے

دل میں مجھے آنے دے اور سب کو جانے دے
ملتا ہے کوئی اس سے ، اس کو وہ منع کر دے

کسی سے منسوب ہے ،مجھ میں مگر مجذوب ہے
چاہتا ہے مجھے بھی وہ ، اسے صرف میرا کر دے

رہے چاہے جس کے ساتھ، دل ہو اس کا میرے ساتھ
تھوڑی سی محبت ہو ، بس اتنی سی وفا کر دے

آنکھ اس کی مشروب ہے، بس یہی مطلوب ہے
قرض نعمان ادا کر دے فرض وہ ادا کر دے

Rate it:
08 Mar, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Noman Baqi Siddiqi
Visit 61 Other Poetries by Noman Baqi Siddiqi »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City