غم کی زبان بولی تو میرے آنسو نکل گئے

Poet: محمد مسعود نوٹنگھم یو کے
By: Mohammed Masood, Nottingham

غم کی زبان بولی تو میرے آنسو نکل گئے
بہت سے اپنے تھے جو اب بچھڑ گئے

راہ زندگی میں برباد کیا ہم نے اپنا سُکون
جب وہ ملا ہی نہیں ہم جان سے بھی گئے

راہ فراق میں لٹی دل کی میری حسرتیں
وہ اگر نہ ملے سوچا اب تو زندگی سے بھی گئے

ہمیشہ خاموشی سے بسر کی زندگی اپنی مسعود
مٹی کی خاموشی کو چرا کر نہ جانے کدھر گئے
 

Rate it:
25 Mar, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Mohammed Masood
محمد مسعود اپنی دکھ سوکھ کی کہانی سنا رہا ہے

.. View More
Visit 363 Other Poetries by Mohammed Masood »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City