عشق ہی کیا ہے کوئی عیب نہیں

Poet: رضا
By: Ali Raza, Chichawatni

عشق ہی کیا ہے کوئی عیب نہیں
اب ڈرتے ہیں ان سے خیر نہیں

اک بارتودیکھا ہو گا خط ہمارا
یوں ہی وہ لگ رہۓ خفا نہیں

کرتے ہیں محبت فقط ان سے
کہیں اسی بات سے انجان نہیں

جواب لکہنے کا سوچا تو ہو گا
کہیں رقیبوںسے پریشان نہیں

جان گئے وہ کہ چاھتے ہیں انہیں
کہیں اوروں کی طرح خواب نہیں

بچ رھۓ ہیں یا بچا رہۓ ہیں
کہیں محبت سے بچانے کی چال نہیں

رضا ہوا تمہارا اب غیر نہیں
ارۓ اپنا ہے اپنا کوئ غیر نہیں

Rate it:
07 Apr, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Ali Raza
Visit 2 Other Poetries by Ali Raza »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City