ختم ہر اچھا برا ہو جائے گا

Poet: Anwar Shaoor
By: kamran, khi

ختم ہر اچھا برا ہو جائے گا
ایک دن سب کچھ فنا ہو جائے گا

کیا پتا تھا دیکھنا اس کی طرف
حادثا اتنا بڑا ہو جائے گا

مدتوں سے بند دروازہ کوئی
دستکیں دینے سے وا ہو جائے گا

ہے ابھی تک اس کے آنے کا یقین
جیسے کوئی معجزہ ہو جائے گا

مسکرا کر دیکھ لیتے ہو مجھے
اس طرح کیا حق ادا ہو جائے گا

کاش ہو جاؤ مرے ہمراہ تم
ورنہ کوئی دوسرا ہو جائے گا

کل کا وعدہ اور اس بحران میں؟
جانے کل دنیا میں کیا ہو جائے گا

رنگ لائے گا شہیدوں کا لہو
ظلم جب حد سے سوا ہو جائے گا

آپ کا کچھ بھی نہ جائے گا شعورؔ
ہم غریبوں کا بھلا ہو جائے گا

Rate it:
09 Apr, 2019

More Anwar Shaoor Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Owais Mirza
Visit Other Poetries by Owais Mirza »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City