حوصلہ شرط وفا کیا کرنا

Poet: Kishwar Naheed
By: kainat, khi

حوصلہ شرط وفا کیا کرنا
بند مٹھی میں ہوا کیا کرنا

جب کوئی سنتا نہ ہو بولنا کیا
قبر میں شور بپا کیا کرنا

قہر ہے لطف کی صورت آباد
اپنی آنکھوں کو بھی وا کیا کرنا

درد ٹھہرے گا وفا کی منزل
عکس شیشے سے جدا کیا کرنا

دل کے زنداں میں ہے آرام بہت
وسعت دشت نما کیا کرنا

شمع کشتہ کی طرح جی لیجے
دم گھٹے بھی تو گلہ کیا کرنا

میرے پیچھے مرا سایہ ہوگا
پیچھے مڑ کر بھی بھلا کیا کرنا

کچھ کرو یوں کہ زمانہ دیکھے
شور گلیوں میں سدا کیا کرنا

Rate it:
18 Jun, 2019

More Kishwar Naheed Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Owais Mirza
Visit Other Poetries by Owais Mirza »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City