میرا کشمیر

Poet: Farah Ejaz
By: farah ejaz, Karachi

کشمیر
میرا کشمیر
خوبصورت کشمیر
حسین وادیوں کا نگر
کیوں آخر کیوں
لہو لہان ہے
موت ظلم
بربریت کا
بازار کیوں گرم ہے
سنسان ویران ہر راہ اس کی
چھپائے اندر طوفان سا
کیوں ہے

سمجھتا ہے دشمن
ڈر گیا کشمیر
مگر ان نہتے جوانوں
کی آنکھوں میں اترتا خون
کیوں ہے
آج ہر بچہ ایک مجاہد بن گیا ہے
یہ بندشیں
یہ سازشیں
روک نہ پائینگیں
بڑھتے قدموں کو
جو آگے بس بڑھتے جائینگے
دشمن کو روندھتے ہوئے
ہاں میرا کشمیر
اب آزاد ہونے کو ہے
لاکھ پہرے بٹھاؤ
جبر کا بازار گرم رکھو
تم اس طوفان کے آگے
ٹہھر نہ پاؤگے
ہیلے تمہارے بودا۔۔۔
ہر سازش ہی گھٹیا
بے نقاب ہوگئے تم
جان گئی تمہیں
اب ساری دنیا ہی
کیوں کہ
جل رہا ہے کشمیر
جل رہا ہے کشمیر
 

Rate it:
17 Aug, 2019

More Life Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: farah ejaz
My name is Farah Ejaz. I love to read and write novels and articles. Basically, I am from Karachi, but I live in the United States. .. View More
Visit 151 Other Poetries by farah ejaz »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City