"عورتیں"

Poet: Muqadas Majeed
By: Muqadas Majeed, Kasur

کہیں ظلم کے گھپ اندھیرے میں دیپ جلاتی عورتیں
کہیں کم عقلی کی پھونک سے دیے بجھاتی عورتیں
کہیں ہاءو ہو کے عالم میں صداءے حق لگاتی عورتیں
کہیں اپنی ہم ذات کا مذاق اڑاتی عورتیں
کہیں انساں کو انسانیت کا سبق پڑھاتی عورتیں
کہیں تنگ و تاریک گلیوں میں کوٹھے چلاتی عورتیں
کہیں رسم و رواج کے خلاف نعرہ لگاتی عورتیں
کہیں جاہل سماج کے ہاتھوں میں کٹھ پتلی سی عورتیں
کہیں بڑے سلیقے سے پل صراطِ حیات پہ چلتی عورتیں
کہیں اک خطا کے بدلے میں سدا بدنام عورتیں
کیسے دیں اک نام انہیں جب ہیں الگ یہ عورتیں
اس بے رنگی کائنات کا ہیں انوکھا رنگ یہ عورتیں

Rate it:
22 Aug, 2019

More Life Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Muqadas Majeed
Visit 9 Other Poetries by Muqadas Majeed »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City