ابن آدم

Poet: Ahmed Zaami
By: Umer, Gujranwala

میں ابن آدم ہوں غلطی پھر کروں گا میں
فردوس سے نکلے ہوئے کو پھر سے آزمانہ ہے

یہ ماجرا خلد کا سمجھ آنے سے قاصر ہے
کہیں فریب حوا کا کہیں گندم کا دانہ ہے

کیا خوب اداہے تیری کہ مجبور کر چھوڑے
یہ ابلیس کا چکر تو فقط اک بہانہ ہے

جو گر ہو اجازت تو سر عام کہہ دوں میں
مجھے اک بار پھر سے پھل گندم کا چرانا ہے
 

Rate it:
08 Sep, 2019

More Life Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Umer
Visit Other Poetries by Umer »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City