وزیر اعظم طاقتوروں کا طعنہ ہمیں نہ دیں: چیف جسٹس کھوسہ

ویب ڈیسک — 

چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہا ہے کہ عدلیہ آزاد ہے اور قانون کے مطابق فیصلے کر رہی ہے۔ ہمارے سامنے صرف قانون طاقت ور ہے، کوئی انسان طاقتور نہیں۔

اسلام آباد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے بیان پر کھل کر تبصرہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عدلیہ سے متعلق بیانات دیتے وقت احتیاط کریں۔ ہمارے نزدیک کوئی طاقتور نہیں ہے۔ ہم نے ایک وزیر اعظم کو گھر بھیجا اور ایک کو ہم نے سزا دی۔ سابق آرمی چیف پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کیس کے فیصلے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہا کہ ایک جنرل کے کیس کا فیصلہ جلد آنے والا ہے۔

خیال رہے کہ چند روز قبل ہزارہ موٹر وے کے افتتاح کے موقع پر وزیر اعظم عمران خان نے چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ اور ان کے بعد چیف جسٹس بننے والے جسٹس گلزار کو مخاطب کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ عدلیہ کو آزاد کرائیں۔ عمران خان نے کہا تھا کہ یہ تاثر دور ہونا چاہیے کہ پاکستان میں طاقتور کے لیے قانون اور کمزور کے لیے الگ قانون ہے۔

جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہا کہ یہ عدلیہ 2009 کی عدلیہ سے مختلف ہے۔ ہم نے کم وسائل کے باوجود 36 لاکھ کیسز کے فیصلے کیے لیکن اسے پذیرائی نہیں ملی۔

چیف جسٹس بولے کہ ہمارے سامنے کوئی انسان نہیں بلکہ قانون طاقتور ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے فیصلوں میں طاقتور اور ناتواں کے درمیان کوئی عدام توازن نہیں ہے۔ سابق وزیر اعظم نواز شریف کی بیرون ملک روانگی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے چیف جسٹس نے کہا کہ انہیں وزیر اعظم نے ملک سے باہر بھیجنے کی منظوری دی۔ ہائی کورٹ نے صرف میرٹ پر فیصلہ کیا۔

اپنے خطاب کے دوران چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے عدلیہ کو وسائل فراہم کرنے کے اعلان پر وزیر اعظم پاکستان کا شکریہ بھی ادا کیا۔

خیال رہے کہ پاکستان کے سیاسی حلقوں میں سابق وزیر اعظم پاکستان نواز شریف کی علاج کے غرض سے بیرون ملک روانگی کے معاملے پر بحث جاری ہے۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.