قلم کی طاقت

(Shazi Bahadur, Peshawar)

کسی زمانے میں ایک بوڑھا آدمی رہتا تھا اس نے اپنے بیٹوں کو بلا کر کہا کے فلاں کھیت میں میں نے ایک خزانہ دفن کیا ھے مگر وہ خزانہ تب کھودنا جب میں اس دنیا سے رخصت ھو جاؤں۔ اچانک بوڑھے باپ کی طبیعت ناساز ہو گئی اور اگلے دن ہی وہ چل بسے۔ بیٹوں نے اس کے وفات کے تیسرے دن اسی کھیت کو کھودنا شروع کیا مگر خزانہ نہ ملا تو انھوں نے اس میں فصل بو دی۔

کہانی کا مقصد یہ ھے کے جب باپ زندہ تھا تو اولاد اس لالچ میں باپ کی خدمت کرتی رہی کہ بعد میں کچھ مل جائے گا۔

اب آتے ہیں اصل بات کی طرف۔ کچھ دن پہلے ایک خبر آنکھوں سے گزری کہ حکومت سرکاری ملازمین کی پینشن ختم کر رہی ہے۔ اگر سرکاری ملازم فوت ہو جاتا ہے تو اس کی پینشن اس کی بیوی کو ملتی ہے اس طرح بچے ماں باپ کا خیال رکھتے ھیں۔ تبھی تو بعض گھرانوں میں بڑے بوڑھے جو سرکاری ملازمین ھیں وہ اولڈ ہاوس سے بچے ہوئے ہیں ورنہ پاکستان کا ہر اولڈ ہاؤس ان بڑوں سے بھرا ہوتامگر لگتا ہے اب وہ وقت آگیا ہے جب پینشن نہیں ہوگی تو اولڈ ہاوس میں جگہ دیکھنی پڑے گی۔

ہمارے حکمران کو تو قرضے کی پڑی ہیں مگر یہ علم نہیں کہ ماں کے ساتھ حساب کتاب میں برکت نہیں رہتی۔
یہاں بھی تو عوام کو لوٹا جا رہا ہے کے ڈیم عوام کے پیسوں سے بن رہا ہے پودے عوام کے پیسوں سے لگ رہے ہیں اور پینشن بھی عوام کی ہی جا رہی ھیں۔ ایک یہی ان کی خدمت کا سلہ بھی تھا وہ بھی چھینا جا رہا ہے۔

عوام کا پیسہ اور حکومت کا پیسہ چور کھا گئے اور بھگت رہی ہے عوام۔ پہلا سٹیپ ان کی پراپرٹی سے سٹارٹ کرنا چاہئے نا کہ عوام کی تنخواہ سے۔

Email
Rate it:
Share Comments Post Comments
06 Sep, 2018 Total Views: 398 Print Article Print
NEXT 
About the Author: Shazi Bahadur

Read More Articles by Shazi Bahadur: 4 Articles with 587 views »

Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
Reviews & Comments
I have read your article and found it productive
By: Kashif, Peshawar on Sep, 08 2018
Reply Reply
0 Like
Madam ap nay mazloomo ki awaz utha ker buhut acha kam kia hay.
By: Gul khan, Quetta on Sep, 07 2018
Reply Reply
0 Like
انتہایٔ عمدہ سوچ کی تحریر لکھی ھے۔ keep it up
By: hasham zahid, Swat on Sep, 07 2018
Reply Reply
0 Like
Part 2 has been uploaded of this article .Take a look on that too
By: Shazi bahadur, Peshawar,jhagra on Sep, 08 2018
0 Like
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.
MORE ON ARTICLES
MORE ON HAMARIWEB