غیرقانونی تارکین وطن کے لیے سخت قوانین کی ضرورت ہے، صدر ٹرمپ

16 Apr, 2019 وائس آف امریکہ اردو
واشنگٹن — وائٹ ہاؤس کا کہنا ہے کہ وہ تمام غیر قانونی تارکین وطن کو ان شہروں میں بھیجنے پر غور کر رہا ہے جو انہیں پناہ دیتے ہیں اور انہیں ڈیپورٹ ہونے سے بچاتے رہے ہیں۔ تاہم سرکاری اداروں کا کہنا ہے کہ ایسا کرنا عملی طور پر ممکن نہیں ہے اور اس مقصد کے لیے کسی طرح کے فنڈز نہیں رکھے گئے۔

وائٹ ہاؤس کی پریس سیکرٹری سارہ سینڈرز نے اتوار کو فاکس نیوز سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ‘‘ہم تمام امکانات کو سامنے رکھ رہے ہیں جب تک کہ ڈیموکریٹ پارٹی یہ تسلیم نہیں کر لیتی کہ سرحد پر ایک بحرانی کیفیت جاری ہے۔’’

ہفتے کے روز صدر ٹرمپ نے اپنے ایک ٹوئٹ میں کہا تھا کہ ‘‘ڈیموکریٹس کو جلد از جلد امیگریشن کے قوانین تبدیل کرنے چاہیئیں۔ ورنہ مرکزی حکومت کے قوانین کو اہمیت نہ دینے والے شہروں کو تمام غیرقانونی تارکین وطن کو اپنے پاس لے لینا چاہیے جن میں گینگ کے ارکان، منشیات کا کاروبار کرنے والے، انسانی اسمگلر اور ہر قسم اور سائز کے جرائم پیشہ افراد شامل ہیں۔ ان شہروں کو اپنے قوانین فوری تبدیل کرنے چاہیئیں۔’’


WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels
 
« مزید خبریں