غلط انجکشن لگنے سے 22 سالہ خاتون ہلاک

19 Apr, 2019 پبلک نیوز

کراچی (پبلک نیوز) کورنگی کے سرکاری اسپتال میں غلط انجکشن لگنے سے ہلاک ہونے والی خاتون کے بھائی کی مدعیت میں مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔ ایف آئی آر میں  کہا گیا ہے کہ ڈاکٹر نے انجکشن لکھا اور کمپاؤڈر نے لگایا جس کے بعد خاتون کی ہلاکت ہوئی۔ جبکہ ایف آئی آر میں نامزد ملزم کمپاوڈر شاہزیب کو پولیس نے گرفتار کر لیا ہے اور ڈاکٹر مفرور ہے۔

 

شہر اقتدار کے علاقے کورنگی کے سرکاری اسپتال میں غلط انجکشن لگانے سے 22 سالہ عصمت کی ہلاکت کا مقدمہ درج ہو گیا ہے۔ مقدمہ خاتون کے بھائی غلام محمد کی مدعیت میں درج کیا گیا ہے۔ جس میں ڈاکٹر اور کمپاوڈر کو نامزد کیا گیا ہے۔

 

درج ایف آئی آر میں کہا گیا ہے کہ ایک نمبر سے کال آئی کہ عصمت کی طبیعت زیادہ خراب ہے اسپتال پہنچو، اسپتال پہنچنے پر دیکھا تو عصمت کی لاش اسٹریچر پر تھی، ڈاکٹر نے انجکشن لکھا اور کمپاؤڈر نے انجکشن لگایا۔

 

عصمت کے والد کا کہنا تھا کہ عصمت دانت کی تکلیف میں مبتلا تھی۔ ڈاکٹر نے چیک اپ کرنے کے بعد انجکشن لگایا، جس سے عصمت کی موت واقع ہوئی، غلام محمد کا مزید کہنا تھا کہ میرا مطالبہ ہے کہ تحقیقات کر کے انصاف فراہم کیا جائے۔ جبکہ پولیس کا کہنا ہے کہ ایف آئی آر میں نامزد کمپاؤڈر گرفتار ہے جبکہ ڈاکٹر مفرور ہے جس کی تلاش جاری ہے۔


WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels
 
« مزید خبریں