اسی کے نام سے آغاز بھی
Poet: Safia Naz
By: Safia Naz, karechi

اسی کے نام سے آغاز بھی اسی کے نام سے انجام بھی
اسی کے در کا فقیرہوں اسی کی محبت کا امین ہوں
بلندیوں سے بلند تراسی کون ومکاں کا مقام ہے
جہاں فرشتوں کی سجدہ ریزیاں عبادتوں کااعلی ٰمقام ہے
وہ شمس وقمر کا نورہے وہی دلوں کا سرور ہہے
یہ ہواؤں کی سرسرا ہٹیں
سب اسی کے دم سے ہیں
یہ عروج و زوال کے سلسلے زندگی کی کہانیاں
 

Rate it: Views: 0 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 04 Dec, 2018
About the Author: Safia Naz

Visit 3 Other Poetries by Safia Naz »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.