تو جو کرتا غیروں کو پاس ہے

Poet: پنچھی
By: Abdulwadood, Rabwah

مجھے چھوڑ کر مجھے توڑ کر
تو جوکرتا غیروں کو پاس ہے
تجھے کیا کہوں میرے مہرباں
کہ تیری ہر ادا مجھے راس ہے
یہ جو کہتے ہیں اسے بھول جا
ان سے کوئ تو اتنا کہے
کیسےچھوڑ دوں میں بندگی
جب دل میں اُسکی پیاس ہے
نہ خیال جاں نہ خیال جہاں
نا ہی غم ہے اپنی ذات کا
زرا دیکھ تو اے طبیب جاں
مجھے عشق کتنا راس ہے
میں جو جی رہا ہوں زندگی
سہ سہ کے تیری بے حسی
کبھی سوچ اس مایوسی میں
میرے دل کو کتنی آس ہے
کبھی درد تو محسوس کر
میرے ہم نوا میری جان کا
کبھی لوٹ آ یہ دیکھنے
تیرا غم بھی مجھ کو خاص ہے

Rate it:
11 Oct, 2018

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Abdulwadood
Visit 39 Other Poetries by Abdulwadood »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City