آنکھیں کھلی رہی میری مرنے کے بعد بھی

Poet: Sobiya Anmol
By: Sobiya Anmol, Lahore

آنکھیں کھلی رہی میری مرنے کے بعد بھی
سکوں نہ آیا کچھ کرنے کے بعد بھی

وہ دیکھتا دیکھ کر مجھے چلا گیا
اور میں جُھکی رہوں اکڑنے کے بعد بھی

گھائل پہلے سے بھی کہیں اور ہو گئی
اُجڑی رہی میں آخر سنورنے کے بعد بھی

اندھیرے ساتھی جنم جنم کے ہو گئے
چھائے رہے دن کے نکلنے کے بعد بھی

روزِمحشر بنا وہ روز مجھ پہ
بچھڑ نہ پائی اُس سے بچھڑنے کے بعد بھی

Rate it:
15 Nov, 2018

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: sobiya Anmol
what can I say,people can tell about me... View More
Visit 128 Other Poetries by sobiya Anmol »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City