کھو گیا نہ جانے وہ کدھر

Poet: رعنا کنول
By: Raana Kanwal, Islamabad

باتیں کرتے کرتے کھو گیا نہ جانے وہ کدھر
یک دم منظر سے غیب ہو گیا نہ جانے وہ کدھر
صبح کی سفیدی میں سو گیا نہ جانے وہ کدھر
سورج کی کرنوں میں کھو گیا نہ جانے وہ کدھر
شام کی سرگوشیوں میں سمٹ گیا نہ جانے وہ کدھر
چاند کی چاندنی میں چھپ گیا نہ جانے وہ کدھر
تاروں کے جھرمٹ میں جھول گیا نہ جانے وہ کدھر
رات کے سناٹوں میں سما گیا نہ جانے وہ کدھر
کنول ہنستے ہنستے کھو گیا نہ جانے وہ کدھر
باتیں کرتے کرتے کھو گیا نہ جانے وہ کدھر
 

Rate it:
27 May, 2019

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Raana Kanwal
Visit 22 Other Poetries by Raana Kanwal »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City