غیر ذامہ دار بھارتی میڈیا ۔۔۔!!

(جاوید صدیقی‎, Karachi)

سن دو ہزار انیس کی ابتدا پاک بھار ت شدید کشیدگی سے ہوئی ہے، جو وقت کے ساتھ ساتھ بڑھتی ہی چلی گئی، اس کشیدگی کی ایک وجہ بھارت میں ہونے والے الیکشن ہیں جس میں انتہا پسند ہندو جماعت بی جے پی کی ناقص پالیسی، ظلم و بربریت اور انسان دشمنی کے سبب ہار ان کا مقدر نظر آرہی ہے، اپنی ہار کو برداشت نہ کرتے ہوئے بھارتی انتہا پسند، ہندودہشت گرد سیاسی جماعت کیساتھ بھارت کی خفیہ ایجنسی را ، اسرائیلی خفیہ ایجنسی موساد،امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے، برطانوی خفیہ ایجنسی ایم سیکس کی مشترکہ شیطانی پلاننگ نے خود بھارت کو تباہی کی جانب دھکیل دیا ہے، اس بربادی میں سب سے زیادہ منفی اور جھوٹ پر مبنی بھارتی میڈیا کی رپورٹنگ رہی ہے، بھارتی میڈیا پر مکمل انتہا پسند ہندو جماعت کے علاوہ اسرائیلی خفیہ ایجنسی اور اسلام دشمن جماعت قادیانیوں نے پاک کے خلاف اپنی دشمنی کا بھرپور کردار ادا کیا، اسرائیل اور قادیانیوں نے پاکستان کے خلاف جنگ کیلئے بھارتی افواج، حکومت اور ایجنسیوں کو بھاری مالی مدد فراہم کی ہے، دنیا نے دیکھا کہ بھارتی میڈیا کس قدر غیر ذمہ دار اور جھوٹی خبروں کی عادی بن چکی ہے، کہانیوں، قصوں اور خیال و خواب پر مشتمل خبریں بنانا اس کا نہ صرف مشن ہوتا ہے بلکہ عوام کو حقیقت سے دور رکھنا، اپنی عوام کو مکمل گمراہ کرناان کا سب سے بڑا مشن رہتا ہے یہی نہیں بلکہ اپنی تمام ناکامی کو چھپانے کیلئے پاکستان پر بلاوجہ الزامات عائد کرنا گویا ان کی عادت سی ہے، انیس سو ستر کی منافقت اور سازش کی کامیابی کو آج تک یہ سمجھ بیٹھے ہیں کہ ان کے ان مکارپن ، دھوکے اور جھوٹ کے سبب نہ صرف اپنی عوام کو گمراہ کرتے رہیں گے بلکہ دنیا کی آنکھوں میں دھول بھی جھونکتے رہیں گے ،ان کے تمام منفی عزائم ہمیشہ پاکستان نے خاک میں مٹادیئے، اپنی ناکامی کو برداشت نہ کرتے ہوئے مقبوضہ کشمیر میں نہتے نوجوانوں پر زہریلے فائر اور عورتوں کی عصمت دری اور قتل و غارت گری کا جہاں بازار گرم قائم رکھا ہوا ہے وہیں پورے بھارت میں اقلیتوں کی زندگیاں اجیرن بنادیں ہیں، انتہا پسند دہشتگرد ہندوؤں کے ہاتھوں اقلیت غیر محفوظ بن کر رہ گئی ہے ، ان انتہا پسنددہشت گرد ہندوؤں کی پشت پناہی ریاست کی جانب سے مکمل کی جارہی ہے ، سول انتظامیہ سے لیکر بھارتی سیکیورٹی اور ایجنسیز بھی بھرپور مدد کررہی ہے، دوسری جانب بھارت کے پڑھے لکھے ذی شعور عوام خود ان جاہل ،بد کردار، قاتل دہشت گردوں سے تنگ ہیں، بھارتی میڈیا کے جھوٹے پروپیگنڈے سے بھارت ہمیشہ دنیا بھر میں ذلیل و خوار رہا ہے، شرمندہ رہا ہے لیکن اپنی سررش سے بازپھر بھی نہیں آتا، گزشتہ مہینے میں بھارتی ریاستوں میں بی جے پی نے ناکامی کا سامنا کیا تو اسے احساس پیدا ہوا کہ یہی ناکامی دیکر ریاستوں سے بھی مل سکتی ہے اپنی سیاسی کامیابی کیلئے بی جے پی نے خود پیدا کردہ پلان اور پروجیکٹ کے تحت مقبوضہ کشمیر میں ایک نوجوان کے ذریعے دھماکہ کروایا گیا لیکن اس دھماکے کی بھی عجیب حقیقت آئی کہ ہندوؤں کی انتہائی کم تر نسل شودر پر مشتمل فوجی اہلکاروں کے قافلے کو اپنی سیاسی مفادات کیلئے بھینٹ چڑھا دیا اور دھماکہ کرواکےبغیر ثبوت عجلت میں اپنی میڈیا کے ذریعے پاکستان پر الزام لگادیا اور شور شرابا کرتے ہوئے پاکستان کے خلاف اقدامات کرنے لگا،بحرکیف بھارتی میڈیا میں نیوز اینکرز، تجزیہ کار سب کے سب یک زبان جھوٹ کے پلندے باندھنے میں ایک دوسرے سے آگے نکلنے کی کوشش کرتے رہے، بات یہیں ختم نہ ہوئی فلم ایکٹر ہوں یا سنگر سب نے اپنے اپنے حصے کی تمام جھوٹ کے ریکارڈ توڑ ڈالے، یقیناً اپنے ملک سے محبت کی جائے لیکن محبت میں عدل و انصاف صرف اسلام میں ہی دیکھا جاسکتا ہے یہی وجہ ہے کہ دین اسلام کے تحت پاکستان کی موجودہ حکومت نے ثٓبت کردیا کہ پاکستان کی ریاست مدینۃ المنورہ کی ریاست کے نقش قدم پر چل پڑی ہے اور وقت کے ساتھ ساتھ نظام ریاست مکمل اسلامی نظام میں تبدیل ہوجائیگی، بھارت کے جنگی جنون کے بخار کے بعد پاکستان کی ریاست کا نظام اسلام نظام میں تبدیل ہوجائیگا اور دین اسلام کے احکامات پاکستان کے تمام شعبوں اور اداروں میں چل پڑیں گے ، پاکستان کی میڈیا سے لیکر افواج تک حق و سچ پر یقین رکھتے ہیں اور حق کی ترجمانی کرتے ہوئے تمام تر عوام کو حالات سے آگاہ کیا جاتا ہے یہی وجہ ہے کہ جن جن سیاسی رہنماؤں نے جھوٹ بول کر ریاست پاکستان کو نقصان پہنچایا آج وہ احتسابی عمل سے گزر رہے ہیں لیکن بھارت اور بھارتی عوام سچ اور حق سے بہت دور ہیں کیونکہ بھارتی جانتے ہیں کہ مقبوضہ کشمیر کے عوام کیساتھ جس قدر نا انصافی اور ظلم و بربریت جس طرح کئی سالوں سے بھارتی ریاست اپنی سینا کے ذریعے نہتے کشمیریوں کوقتل و غارت کرتے چلے آئے ہیں وہاں کی حقیقی اور سچی صحافت کیوں نہیں کی جاتی، دنیا کے مندوبین کو کیوں نہیں وہاں کے حالات کا جائزہ لینے کیلئے اجازت دی نہیں جاتی۔۔۔معزز قارئین!! بھارت اسرائیل کے ساتھ اس خطے میں امن کو تباہ کرنے پر تلے ہوئے ہیں، بھارت نے اپنی خفیہ ایجنسی را کے ذریعے پاکستان کے امن و امان کو برباد کرنے کیلئے ستر سالوں سے کوششیں کرتا چلا آرہا ہے ، بھارتی حکومت نے اپنے دہشت گردوں کو افغانستان تعین کیا ہوا ہے وہیں سے پاکستان کے اندر شورش اور بے امنی پھیلانے کیلئے کارفرما رہا ہے ، تحریک طالبان پاکستان، داعش جیسی کالعدم دہشت گرد تنظیمیں اسلامی ممالک کو برباد کرنے کیلئے دہشتگردی پھیلاتے چلے آرہے ہیں ،بھارتی میڈیا نے کبھی بھی افغانستان اور ایران میں اپنے خفیہ اڈوں کے ذریعے پاکستان پر حملے کرنے والے دہشت گردی کی مزمت نہیں کرتا، امریکہ، برطانیہ، فرانس، جرمنی، روس، بنگلہ دیش اور اسرائیل نےنہ صرف پاکستان بلکہ شام ،اردن اور فلسطین کی بربادی میں اپنا اپنا کردار ادا کیا ہے، دنیا میں اسرائیل نہتے فلسطینیوں اور بھارت نہتے کشمیریوں پر متواتر ظلم و بربریت کرتا چلا آرہا ہے ، اسلامی دنیا کا واحد ایٹمی ملک اسلامی جمہوریہ پاکستان ہے جس نے دنیا بھر میںامن و امان کو قائم کرنے کیلئے بے پناہ قربانیاں پیش کی ہیں، ہزاروں دھماکے کے نیتجے میں جانوں کا نذرانہ پیش کیا ہے، ہونا تو یہ چاہیئے تھا کہ دنیا کے تمام ممالک پاکستان کی اس کاوش کو سراہتے اور پاکستان کی ہر طرح مدد کرتے لیکن دنیا کے طاقتور ممالک نے بھارتی مکارپن، منافقت اور جھوٹے پروپیگنڈے کو تقویت پہنچائی، پاکستان وہ ملک ہے جو تن تنہا بھارت، امریکہ، اسرائیل سے لڑ سکتا ہے بلکہ دنیا کی تمام بڑی طاقتوں سے مقابلہ کرسکتا ہے اس کی سب سے بڑی وجہ اس کے سولجر اور افسر وں کا ایمان کا مل ہے ،افواج پاکستان اسلحہ سے زیادہ جذبہ ایمانی سے لڑتی ہیں، یہی وجہ ہے کہ اللہ تبارک و تعالیٰ اپنے فرشتوں کو حکم ددیتا ہے کہ ان سپاہیوں کا ساتھ دیتے ہوئےجنگ لڑو، بھارت کی سینا نے خود بھی مشاہدہ کیا ہے کہ پاکستانی افواج کیساتھ فرشتے بھی جنگ لڑتے ہیں، پاکستانی افواج کے اہلکار جانتے ہیں کہ شہید درجہ اول پر ہے ،شہید وہ رتبہ ہے جو ہمیشہ زندہ جاوید رہتا ہے ، حالیہ دنوں میں پاکستانی افواج اور وزیر اعظم عمران خان سے اخلاقیات کی بلندیوں کو چھولیا ہے پوری دنیا افواج پاکستان اور وزیر اعظم کی بہترین حکمت اور پالیسی کو پسند فرمایا، بھارتی قیدی کو ایک دن کی دوری کے بعد رہا کرکے سفارتی، جنگی، اخلاقی بنیادوں پر برتری حاصل کرلی جبکہ پاکستان بھارت سے کئی گناہ مضبوط اور طاقتوربن چکا ہے پھر بھی صبر و ضبط کمال کا ہے ،بھارت اور پاکستان کی عوام میں یہی فرق ہے کہ پاکستان میں اقلیت محفوظ اور مذہبی آزاد ہیں جبکہ بھارت میں تمام اقلیت غیر محفوظ اور مذہبی سلاسل میں ہیں،میرے ان الفاظ کی صداقت بھارتی دہشت گردوں کے قتل ،ظلم و بربریتکے واقعات پیدا کیئے گئے اور سنگین حالات ہیں جن میں سانحہ بابری مسجد ، راجستان ،جے پور میں مسلمانوں کا قتل عام ان تمام محرکات کے پیچھے نریندر مودی اور بی جے پی کی کارفرمائیاں شامل ہیں ۔شر پسند دہشتگرد اور منفی سوچ کا مالک نریندر مودی اور اس کی سیاسی جماعت بی جے پی جب جب بھارت کے نظام ریاست میں رہے گی تب تک بھارت میں امن و خوشحالی نا ممکن ہے۔۔۔اللہ پاکستان اور افواج پاکستان کی ہمیشہ حفاظت فرمائے آمین ثما آمین ۔۔۔۔پاکستان زندہ باد، پاکستان پائندہ باد۔۔!!

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 214 Print Article Print
About the Author: جاوید صدیقی‎

Read More Articles by جاوید صدیقی‎: 306 Articles with 129062 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language: