مجدد برکاتیت حضرت سید شاہ ابوالقاسم محمد اسماعیل حسن شاہ جی میاں قدس سرہٗ

(Dr. Muhammed Husain Mushahid Razvi, Malegaon)
برکاتی کوئز سے

سوال۱: حضرت سید شاہ محمد اسماعیل حسن قدس سرہٗ کی ولادت کب ہوئی؟
جواب: ۳؍ محرم الحرام ۱۲۷۲ھ میں مارہرہ شریف میں ہوئی۔
سوال۲: آپ نے قرآن مجید کب حفظ کیا اور والد ماجد (حضرت سید شاہ محمد صادق قدس سرہٗ) نے اس پراپنی خوشی کا اظہار کیسے کیا؟
جواب: جوانی کی عمر میں اپنے شوق سے قرآن مجید حفظ کرنا شروع کیا اور ۱۲۹۳ھ میں حفظ کی تکمیل کی۔آپ کے والد ماجد نے اس موقع پر سیتا پور میں ایک عالیشان مسجد کی تعمیر فرما کر اپنی خوشی کا اظہار کیا۔
سوال۳: آپ کی زوجہ کا کیا نام تھا اور ان سے کتنے فرزند تولد ہوئے؟
جواب: آپ کی زوجہ کا نام سیدہ منظور فاطمہ تھا اور آپ سے دو صاحبزادے: (۱) حضرت سید شاہ غلام محی الدین فقیر عالم قدس سرہٗ (۲) تاج العلماء حضرت سید شاہ اولاد رسول محمد میاںقدس سرہ تولد ہوئے۔
سوال۴: آپ حج پر کب تشریف لے گئے؟
جواب: ۱۳۰۰ھ میں۔
سوال۵: آپ کو مجدد برکاتیت کیوں کہا جاتا ہے؟
جواب: خانوادۂ برکات پر ایک زمانہ ایسا بھی آیا تھا جب علم و عمل سے دوری ہونے لگی تھی اس وقت آپ نے اپنی انتھک کوششوں سے خود اپنے شوق سے علم دین پڑھا اور اپنی آل و اولاد اور اعزہ و اقربا کو علم دین سکھا کر تجدیدی کارنامہ انجام دیا اس لیے آپ کو مجدد برکاتیت کہا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ آپ نے بیش از بیش قیمت ادا کر کے اپنے بزرگوں کی کتابیں جمع فرمائیں اور اپنے خاندانی کتب خانے کو محفوظ کیا نیز خاندانی روایات کا تحفظ فرمایا۔
سوال۶: آپ کا سب سے نمایاں وصف کیا تھا؟
جواب: تصلب فی الدین یعنی اگر آپ کسی کو بھی راہ حق سے ذرہ برابر بھی الگ تھلگ دیکھتے تو اس کی اصلاح کرنے سے بالکل نہ جھجھکتے خواہ وہ کتنا ہی قریبی کیوں نہ ہو۔
سوال۷: حضرت کی چند مشہور تصانیف کے نام بتائیں۔
جواب: (۱) رسالہ رد القضاء من الدعاء فی اعمال دفع الوباء (۲) مجموعہ سلاسل منظوم (۳) مجموعۂ کلام (۴) رسالہ اعمال و تکسیر (۵) کرامات ستھرے میاں۔
سوال۸: آپ کا وصال کب ہوا؟
جواب: ۱۳۶۷ھ میں مارہرہ شریف میں۔
سوال۹: آپ کا تخلص کیا تھا؟
جواب: آپ ’’وقارؔ‘‘ تخلص فرماتے تھے۔
سوال۱۰: آپ کے خلفا کے اسمائے گرامی کیا ہیں؟
جواب: آپ نے بے شمار علما و مشائخ کو خلافت سے نوازاجن میں سے چندمشہور خلفا یہ ہیں: (۱) حضرت سید شاہ غلام محی الدین فقیر عالم (۲) حضرت سید شاہ اولاد رسول محمد میاں (۳) حضرت سید شاہ آل عبا قادری (۴) سید العلما حضرت سید آل مصطفی (۵) احسن العلما حضرت سید شاہ مصطفی حیدر حسن میاں وغیرہ۔
سوال۱۱: آپ کے کچھ اہم کارناموں کو بیان کیجیے۔
جواب: (۱) تحریک آزادی، ترک موالات اور خلافت موومنٹ میں اپنے صاحبزادے حضرت تاج العلما اور دونوں ہمشیر زادوں حضرت سید العلما اور حضرت احسن العلما کے ساتھ تنظیم قائم کر کے خانقاہ برکاتیہ کا موقف زمانے کو بتایا (۲) شہزادگان کو زیور تعلیم سے آراستہ کیا (۳)تبرکات خاندانی کو یکجا کیا (۴) اپنے خاندانی کتب خانے کو از سر نو قائم کیا اور تمام مخطوطات کو محفوظ کیا۔
بہ شکریہ : البرکات اسلامک ریسرچ اینڈ ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ، انوپ شہر روڈ،علی گڑھ
دعاؤں کا طالب : محمد حسین مُشاہد رضوی
 

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Dr. Muhammed Husain Mushahi Razvi

Read More Articles by Dr. Muhammed Husain Mushahi Razvi: 409 Articles with 360825 views »


Dr.Muhammed Husain Mushahid Razvi

Date of Birth 01/06/1979
Diploma in Education M.A. UGC-NET + Ph.D. Topic of Ph.D
"Mufti e A
.. View More
11 Mar, 2017 Views: 419

Comments

آپ کی رائے