میں اپنے بچوں سے اب تک نہیں ملا کیونکہ ۔۔ 9 بچوں کو جنم دینے والی خاتون کے شوہر کون ہیں اور کہاں غائب تھے؟

رواں ماہ 5 مئی کو بیک وقت 9 بچوں کو جنم دینے والی افریقی ملک مالی کی خاتون حلیمہ کے شوہر نے کہا ہے کہ ان کے گھر پیدا ہونے والے تمام بچے خدا کی طرف سے انمول تحفہ ہیں۔

مالی کی 25 سالہ خاتون حلیمہ سیسی نے 5 مئی کو افریقی ملک مراکش میں بیک وقت 9 بچوں کو جنم دیا تھا، ان کے ہاں 5 بیٹے اور 4 بیٹیاں ہوئی تھیں۔

اگر حلیمہ سیسی کے تمام بچے زندہ بچ گئے تو وہ ایک نیا ریکارڈ بنانے میں کامیاب ہوجائیں گی اور وہ دنیا کی پہلی خاتون بن جائیں گی، جن کے ہاں پیدا ہونے والے 9 ہی بچے صحت مند ہوں گے۔

ان سے قبل 2009 میں امریکی خاتون نادیہ سلیمان کے ہاں پیدا ہونے والے 8 ہی بچے زندہ ہیں۔

دوسری جانب حلیمہ سیسی کے 35 سالہ شوہر قادر عربی بھی سامنے آگئے ہیں، جنہوں نے اپنے ہاں 9 بچوں کی پیدائش کو خدا کا تحفہ قرار دیا اور ساتھ ہی بتایا کہ وہ بچوں سے ملنے کے لیے بے قرار ہیں۔

میل آن لائن کو دیے گئے انٹرویو میں قادر عربی کا کہنا تھا کہ انہیں ڈاکٹرز نے بتایا تھا کہ ان کے ہاں 7 بچوں کی پیدائش ہوگی مگر ان کے ہاں 2 زائد بچوں نے جنم لیا ہے اور مذکورہ دو زائد بچے ان کے لیے خصوصی تحفہ ہیں اور وہ انہیں دیکھنے کے لیے بے تاب ہیں۔

انہوں نے اپنے ہاں بیک وقت 9 بچوں کی پیدائش پر اللہ کا شکر ادا کیا اور کہا کہ جس خدا نے انہیں پیدا کیا، وہی خدا ان کی پرورش بھی کرے گا۔

قادر عربی کے مطابق وہ مالی فوج میں سول ملازم ہیں اور ان کا عہدہ تقریبا کیپٹن کے برابر ہے اور انہیں پہلی بھی ڈھائی سالہ بیٹی ہیں، جو اس وقت ان کے ہمراہ مالی میں موجود ہے۔

قادر عربی کا کہنا تھا کہ کورونا کے باعث نافذ سفری پابندیوں کی وجہ سے ان کا فوری طور پر مراکش جانا ممکن نہیں تاہم ان کے تمام دستاویزات مکمل ہیں اور نرمیاں ہوتے ہی وہ اپنے 9 بچوں کو دیکھنے مراکش جائیں گے۔

قادر عربی نے بتایا کہ انہوں کی حلیمہ سے 2017 میں شادی ہوئی اور شادی کے ایک سال بعد ہی ان کے ہاں پہلی بچی کی پیدائش ہوئی تھی۔

قادر عربی کے مطابق وہ اہلیہ کے ساتھ رابطے میں ہیں، ان کی اہلیہ اور بچوں کی صحت مسلسل بہتر ہو رہی ہے۔


WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.

1227