رنگ برنگی گوبھی ۔۔ گوبھی میں چھپے صحت کے کچھ ایسے خُفیہ راز جو آج سے پہلے آپ بھی نہیں جانتے ہوں گے

image

گوبھی کو کھانے میں تو سب ہی کھاتے ہیں اور کچھ لوگ بند گوبھی کو سلاد اور رائتے کے طور پر استعمال کرتے ہیں۔ گوبھی سفید رنگ کی ہم سب ہی نے دیکھی ہے مگر یہ 2 اور رنگوں میں بھی دستیاب ہوتی ہے اب جیسے آپ مذکورہ تصویر میں دیکھ رہے ہیں کہ گوبھی سفید، جامنی اور ہرے رنگ کی بھی ہوتی ہے۔

گوبھی کے چند خُفیہ راز:

ہڈیوں کے لئے

٭ گوبھی ہڈیوں کے لئے فائدے مند ہے، یہ ہر طرح کے درد کو ختم اور ہڈیوں کو مضبوط بناتی ہے۔

قوتِ مدافعت

٭ ہڈیاں قوتِ مدافعت کو بھی مضبوط بناتی ہے اور موسمی یا وائرل اثرات سے بچانے میں مدد دیتی ہیں۔

وزن کم

٭ جن لوگوں کو وزن کم کرنا ہے ان کو چاہیئے کہ وہ نہارمنہ گوبھی کا پانی ابال کر پی لیں کیونکہ یہ وزن کو تیزی سے کم کرنے میں بہت فائدے مند ہے۔

معدہ کمزور

٭ گوبھی میں گلوکو ریفینن، گلوکوبراسین ہوتے ہیں جو معدے میں زہریلے مادوں کو جمع ہونے سے روکنے اور غذا کے بڑے ذرات کو چھوٹے ٹکڑوں میں تقسیم کرنے کا کام بآسانی کر دیتا ہے لہذا جن لوگوں کا معدہ کمزور ہے وہ گوبھی کا سوپ لازمی پیئیں۔

ہارمونز

٭ گوبھی ہارمونز کے توازن کو برقرار رکھنے میں مدد دیتی ہے اور خواتین کے ایسٹروجن لیول کو بھی برقرار رکھتی ہے جس سے صحت و خوبصورت دونوں میں اضافہ ہوتا ہے۔

بینائی

٭ گوبھی آپ کو اندھے پن سے بھی بچاتی ہے، بینائی کو تیز اور دماغ کو راحت پہنچاتی ہے۔

گوبھی فائدے مند کیوں؟

گوبھی میں زیرو فیٹ، سلفر، گلوکو ریفینن، گلوکوبراسین، وٹامن اور اومیگا تھری فیٹی ایسڈز ، بی ٹا کیروٹین، کیفک ایسڈ، سینامک ایسڈ، ریوٹین ، گلوکوسائنولیٹس، وٹامن سی، کیروٹونوئیڈز، فائبر اور دیگر فینولک مرکبات پائے جاتے ہیں۔

گوبھی سفید کیوں ہوتی ہے؟

زیادہ تر گوبھی سفید رنگ کی ہوتی ہے جس کی وجہ یہ ہے کہ جب گوبھی کا پھول اپنے نشوونما کے مرحلے سے گزرتا ہے تو اس وقت اس کی کلیاں پتوں سے ڈھک جاتی ہیں، یہی وجہ ہے کہ زیادہ تر گوبھی سفید ہوتی ہے اور کچھ گوبھی جامنی اور ہری اس وجہ سے ہوتی ہے کیونکہ پتوں کا رنگ چڑھ جاتا ہے اور سورج کی روشنی منعکس ہو کر چھن چھن کر آتی ہے۔

گوبھی کے پتے بھی فائدے مند:

گوبھی کے پتے بھی بہت فائدے مند ہوتے ہیں، ہڈیوں جوڑوں اور ٹوٹی ہوئی ہڈیوں کو اگر جلد از جلد مضبوط بنانا چاہتے ہیں تو ان کا پانی لازمی پینا شروع کردیں آپ خود کو جلدی صحت مند پائیں گے۔


WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
سائنس اور ٹیکنالوجی
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.