قبائلی عوام کی جانب سے مطالبات کے حق میں احتجاجی ریلی

13 Jun, 2018 اب تک
قبائلی عوام کی جانب سے مطالبات کے حق میں احتجاجی ریلیاسلام آباد: (13 جون 2018) الیکشن کمیشن نے قبائلی علاقوں میں صوبائی اور قومی اسمبلی کے الیکشن عام انتخابات کا حصہ بنانے کی درخواست پر کارروائی کی یقین دہانی کروادی ہے۔قبائلی عوام کی اپنے مطالبات کے حق میں اسلام آباد میں احتجاجی ریلی نکالی۔ الیکشن کمیشن اور پارلیمنٹ کے سامنے احتجاج نے پولیس کی دوڑیں لگوادیں۔مظاہرین کا کہنا تھا کہ ہمیں صوبائی اور قومی اسمبلی کے انتخابات 2019ء میں قبول نہیں۔ فاٹا میں قومی اور صوبائی اسمبلیوں کا الیکشن عام انتخابات 2018ء کاحصہ بنانے سے ایک انچ بھی پیچھے نہیں ہٹیں گے۔قبائلی عوام نے الیکشن کمیشن جانے کی کوشش کی تو پولیس نے مظاہرین کو نادرا چوک پر روک دیا۔ قبائل کے مشتعل ہونے کے باعث پولیس کی بھاری نفری طلب کرلی گئی۔ کسی بھی صورتحال سے نمٹنے کیلئے آنسو گیس، لاٹھی چارج اسکوارڈ کو بھی چوکس رکھا گیا۔بعدازاں قبائلی مظاہرین نے الیکشن کمیشن کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ فاٹا کے عوام کو 2019ء کے بجائے عام انتخابات 2018ء میں حق نمائندگی دیا جائے۔متحدہ قبائل پارٹی کی جانب سے فاٹا میں جلد انتخابات کرانے کی درخواست پر الیکشن کمیشن حکام نے کارروائی کی یقین دہانی کرائی، جس کے بعد قبائل نے احتجاج ختم کردیا۔
 

Watch Live News

 مزید خبریں 
« مزید خبریں
Post Your Comments
Select Language: