آج میں اپنی ماں کے ساتھ جہاز اُڑاؤں گا ۔۔ بیٹے اور ماں کی یہ پائلٹ جوڑی کیسے بنی؟

image

وہ بیٹے دنیا میں بہت ترقی حاصل کرتے ہیں جو اپنی ماں کو ترجیح دیتے ہیں۔ اور جب ماں بیٹے ایک ہی شعبے سے وابستہ ہوں تو زندگی اور بھی خوبصورت ہوجاتی ہے جیسا کہ نیچے دی گئی کہانی میں بتایا گیا۔

ایک نوجوان جس کی والدہ بھارتی ائیرلائن میں بطور پائلٹ کام کرتی ہیں اور ساتھ ہی اسی ائیر لائن میں ان کا بیٹا بھی بطور پائلٹ اپنے فرائض انجام دے رہا ہے۔

سوشل میڈیا پر پائلٹ ماں اور بیٹےکی ایک دل کو چھولینے والی ویڈیو وائرل ہوئی جس نے سب کے دل چھو لیئے۔

ماؤں کے دن کے موقع پر خاتون پائلٹ کے بیٹے 24 سالہ بیٹے نے فلائٹ مائیکروفون پر اعلان کیا کہ اس نے اپنی زندگی کے 24 سال اپنی والدہ کے ساتھ بطور مسافر سفر کیے ہیں لیکن اب مدرز ڈے کے موقع پر وہ اپنی والدہ کے ساتھ بطور پائلٹ فلائٹ آپریٹ کریں گے۔ پائلٹ بیٹے نے اس سرپرائز کو اپنی ماں کے لیے 'خراج عقیدت' کہا۔

ویڈیو کی شروعات پائلٹ کے ہاتھ میں ایک گلدستہ لیے ہوائی جہاز کے دروازے سے داخل ہونے سے ہوتی ہے۔ اس کے فوراً بعد، وہ اپنی کو پائلٹ سے ملتے ہیں، جو ان کی ماں ہوتی ہے، اور اسے اپنے گلے سے لگاتی ہے۔

یہ ویڈیو ایک ٹوئٹر صارف انوج دھر نے اپ لوڈ کی تھی جس کے کیپشن میں لکھا تھا کہ”یہ ایک دل چھو لینے والی ویڈیو ہے۔ ماں اور بیٹا ایک ساتھ پائلٹ اور کوپائلٹ کے طور پر جہاز اُڑاتے ہیں۔

پائلٹ بیٹے کا کہنا ہوتا ہے کہ ”خواتین و حضرات، یہ آپ کے پہلے افسر امان ٹھاکر ہیں۔ براہ کرم میں تھوڑی دیر کے لیے آپ کی توجہ چاہوں گا؟ جیسا کہ ہم سب جانتے ہیں ماؤں کا دن بہت خاص دن ہوتا ہے۔ مجھے یقین ہے کہ آپ اپنی ماں کے لیے اپنا سارا پیار اور احترام ضرور پیش کر رہے ہوں گے۔ میں مدرز ڈے پر اپنی ماں کو ایک چھوٹا سا خراج عقیدت پیش کرنا چاہوں گا۔ میری زندگی کے 24 سال ہو چکے ہیں کہ میں اپنی ماں کے ساتھ مختلف ایئر لائنز اور انڈیگو میں مختلف پروازوں میں بطور مسافر پرواز کرتا رہا ہوں۔ لیکن آج کا دن میرے لیے بہت خاص ہے کیونکہ میں ان کے ساتھ اس فلائٹ کو کو پائلٹ کروں گا۔ امان ٹھاکر نے اپنے خطاب میں کہا کہ آپ نے میرے لیے جو کچھ کیا اس کے لیے آپ کا شکریہ اور میرے لیے موجود ہونے کے لیے آپ کا بہت شکریہ۔

مذکورہ ویڈیو کو اب تک 6,000 سے زیادہ لائیکس مل چکے ہیں۔


WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
تازہ ترین خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.