قبض کیوں؟ ہم اپنے دشمن خود ہیں٬ نجات کیسے ممکن؟

 

قبض کا عمومی مطلب یہ ہے کہ آپ ہفتے میں تین یا اس سے کم مرتبہ فضلہ خارج کریں۔ لیکن اس کا مطلب یہ بھی ہو سکتا ہےکہ فضلہ نہ آنے کی وجہ سے پیٹ میں تناؤ ہو اور فضلہ چھوٹی، سخت اور خشک شکل میں آئے۔ خوشخبری یہ ہے کہ قبض کا علاج آسان ہے، اور اس سےچھٹکارا اور بھی آسان ہے ، اگر آپ اس کی وجوہات جانتے ہوں۔
 


قبض کے اسباب: طرز رہن سہن اور خوراک
غیر معیاری غذا اور غیر فعال طرز زندگی قبض کی سب سے عام وجہ ہے ۔بہت زیادہ جنک فوڈ کھانا اور ورزش نہ کرنا آپ کی صحت پر تباہ کن اثرات مرتب کر سکتا ہے۔ غذا سے متعلق چند عوامل جن کی وجہ سے آپ قبض کا شکار ہو سکتے ہیں ، درج ذیل ہیں۔
• ایسی اشیاء زیادہ کھانا جن میں دودھ، دہی یا ڈیری پراڈکٹس کا استعمال کیا گیا ہو
• ایسی اشیاء زیادہ کھانا جن میں چکنائی اور چینی کا زیادہ استعمال کیا گیا ہو
• فائبر سے بھرپور کھانے کی اشیاء کی کمی (جیسے پھل، سبزیاں اور دلیہ وغیرہ)
• پانی کی کمی، پانی کم پینا
• شراب یا کیفین کا استعمال

اس کے علاوہ جیسے ہی آپ کو فضلہ خارج کرنے کی حاجت ہو، فوراً ٹوائلٹ کا رخ کریں۔ مناسب وقت اور جگہ کے انتظار میں فضلہ کو روکنا بھی قبض کا باعث بن سکتا ہے۔ روزمرہ کے معمولات میں تبدیلی بھی نظامِ انہضام کے لیے مسائل کا باعث ہو سکتی ہیں ، جس کی وجہ سے آپ قبض کا شکار ہو سکتے ہیں، مثلاً ٹوائلٹ تک رسائی میں مسئلہ کا سامنا ہونا، ورزش میں کمی اور غذا میں تبدیلی، یہ تمام چیزیں بھی قبض کا باعث بن سکتی ہیں۔ لہٰذا اگر آپ سفر میں ہیں تو کوشش کریں کہ اپنے معمولات کو تواتر سے جاری رکھیں اور فائبر سےبھرپور اشیاء کھاتے رہیں ، ورزش کرتے رہیں اور پانی پیتے رہیں۔
 


قبض کے اسباب:
قبض بہت سی مجوزہ دواؤں کا عام ضمنی اثر/سائیڈ ایفیکٹ ہے۔ اگر آپ نے ایک نئی دوا لینی شروع کی اور آپ کو یہ محسوس ہوتا ہے کہ آپ کے فضلہ کی شکل یا معمول میں تبدیلی آ گئی ہے ،تو اپنے ڈاکٹر سے مشورہ کریں تاکہ اس مسئلہ پر بروقت قابو پایا جا سکے۔

آپ کی جسمانی صحت بھی قبض کی وجوہات میں سے ایک ہو سکتی ہے۔ جسمانی صحت خراب ہونے کی صورت میں ہو سکتا ہے کہ کسی بیماری کے سائیڈ ایفیکٹ کے طور پر آپ کی آنتوں میں خوراک کی حرکت محدود ہو جائے، جس کی بنا پر آپ قبض کا شکار بن سکتے ہیں۔ لہٰذا کسی بھی بیماری یا جسمانی صحت میں خرابی کی صورت میں اپنے معالج سے فوری رجوع کریں تاکہ قبض کی تکلیف سے بچا جا سکے۔
دیگر عوامل جن کی بنا پر آپ قبض کا شکار ہو سکتے ہیں وہ درج ذیل ہیں۔
• اسٹروک
• پارکنسنز کی بیماری
• ریڑھ کی ہڈی کی چوٹ
• غیر فعال تھائیرائیڈز
• حاملہ ہونا
• ذیابیطس

ان کے علاوہ بڑھتی عمر میں اعضاء کے افعال سست ہونے اور محدود ہو جانے کی بنا پر بھی اکثر قبض کی شکایت ہو جاتی ہے، جس کے لیے بڑی عمر کے افراد کو معالج سے مشورہ اور دوا لینا ضروری ہے۔
قبض سے آرام پانے کے لیے کئی قدرتی طریقے موجود ہیں جنہیں آپ اپنے گھر میں ہی اپنا کر اس بیماری سے چھٹکارا پا سکتے ہیں اور ان میں سے کئی طریقہ جات کو میڈیکل سائنس بھی مانتی ہے۔

۱۔ زیادہ سے زیادہ پانی پینا
متواتر طور پر جسم میں پانی کی کمی بھی قبض کی وجہ بن سکتی ہے۔ اس سے بچنے کے لیے ضروری ہے کہ آپ متواتر پانی پیتے رہیں تاکہ جسم میں پانی کی کمی نہ ہو اور قبض کی صورتحال درپیش نہ آئے۔لیکن اگر آپ کو قبض ہو گئی ہے، تو پھر اس سے آرام پانے کے لیے کاربونیٹڈ پانی پئیں۔ یاد رہے کہ کاربونیٹڈ ڈرنکس ، کاربونیٹڈ پانی کا متبادل نہیں اور بعض صورتحال میں یہ قبض کی کیفیت کو مزید بڑھاوا دیتی ہیں۔


۲۔ زیادہ سے زیادہ فائبر والی (ریشہ دار) اشیاء کھانا
جو افراد قبض کا شکار رہتے ہیں انہیں فائبر والی خوراک کھانے کا مشورہ دیا جاتا ہے، کیونکہ تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ 77% افراد کو کھانے میں فائبر والی خوراک ملا کر کھانے سے قبض سے افاقہ ہوا ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ فائبر ملک خوراک زیادہ کھانے سے انتڑیوں میں خوراک کی حرکت میں اضافہ ہوتا ہے اور اس کے علاوہ فائبر والی خوراک زود ہضم ہونے کی بنا پر قبض سے نجات دلاتی ہے۔


۳۔ باقاعدگی سے ورزش کرنا
حالیہ تحقیق سے اس بارے میں ملے جلے نتائج سامنے آئے ہیں کہ آیا ورزش کرنے سے قبض میں افاقہ ہوتا ہے یا نہیں، لیکن معالج اس بات پر متفق ہیں کہ ورزش کے نتیجے میں اعضاء کو ملنے والی تحریک کی بنا پر خوراک کو جسم کا حصہ بننے اور ہضم کرنے میں معاونت ملتی ہے، جس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ ورزش قبض کی علامات اور وجوہات کو دور کرنے میں معاون ہے۔


۴۔ کافی پینا
کافی پینا، خاص کر ایسی کافی جس میں کیفین ہو، قبض کو دور کرنے میں معاون ثابت ہوا ہے۔ اس کی وجہ کافی کا نظامِ انہضام سے متعلقہ پٹھوں کو تحریک دینا ہے، جس کی وجہ سے خوراک کی حرکت میں اضافہ ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ کافی میں حل پذیر فائبر کی معمولی مقدار بھی شامل ہوتی ہے جو کہ آنتوں میں موجود بیکٹریا کو بیلنس کرکے آپ کو قبض سے بچاتی ہے۔


۵۔ ڈیری مصنوعات سے اجتناب
بعض اوقات ڈیری مصنوعات اور لیکٹوز کی عدم برداشت بھی قبض ہونے کا باعث بنتی ہیں۔ اگر آپ محسوس کرتے ہیں کہ آپ کو ڈیری مصنوعات سے بنی اشیاء کھانے سے قبض کا مسئلہ درپیش آتا ہے، اس کا سب سے آسان حل یہ ہے کہ آپ ان مصنوعات کو اپنی غذا سے نکال دیں۔ اس سے آپ کو کیلشیم کی کمی کا مسئلہ درپیش آ سکتا ہے لیکن اس کے لیے آپ اپنی خوراک میں کیلشیم سے بھرپور متبادل اشیاء شامل کر کے اس کمی کا ازالہ کر سکتے ہیں۔


Source: Hamariweb Health Articles

Disclaimer: All information is provided here only for general health education. Please consult your health physician regarding any treatment of health issues.
Email
Rate it:
Share Comments Post Comments
09 Mar, 2018 Total Views: 6476 Print Article Print
NEXT 
Reviews & Comments
bohat mafeed sabit hota hia
By: Mian Mehran, sheikhupura on Mar, 09 2018
Reply Reply
0 Like
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.
Chronic Constipation: When to See Your Doctor. If you have chronic constipation or if constipation is new or is a change in your normal bowel habits, give your doctor a call. ... Some medical conditions such as hypothyroidism, irritable bowel syndrome, Parkinson's disease, and diabetes can also cause chronic constipation.
MORE ON ARTICLES
MORE ON HAMARIWEB