چین: 32 ہزار فٹ کی بلندی پر مسافر طیارے کی ونڈ سکرین ٹوٹ گئی

 

چین کے مسافر بردار طیارے کی دورانِ پرواز فضا میں ونڈ سکرین ٹوٹنے کی وجہ سے جہاز کو ہنگامی لینڈنگ کرنا پڑی۔ مسافر طیارے کی ونڈ سکرین اس وقت ٹوٹی جب جہاز 32 ہزار فٹ بلندی پر تھا۔

ایئر بس A319کے کپتان کا کہنا ہے کہ اچانک کاک پٹ میں زودار دھماکے سے فضا ہی میں ونڈ سکرین ٹوٹ گئی۔ انھوں نے چین کے مقامی روزنامے کو بتایا کہ حادثے سے قبل ایمرجنسی وراننگ نہیں ملی تھی۔
 


انھوں نے بتایا کہ ’ونڈ سکرین میں کریک پڑا اور زور دار آواز آئی۔ دوسری چیز جو مجھے پتا چلی کہ میرا معاون پائلٹ کاک پٹ سے باہر کھینچا آ رہا تھا۔‘

خوش قسمتی سے معاون پائلٹ نے بیلٹ پہنی ہوئی تھی۔ اُسے پکڑ کر دوبارہ کاک پٹ میں لایا گیا۔ جہاں درجہ حرارت اور دباؤ کم ہو رہا تھا اور چیزیں گر رہی تھیں۔

جہاز کے کپتان نے کہا کہ ’ہر چیز ہوا میں معلق تھی۔ میں ریڈیو بھی نہیں سن پا رہا تھا۔ جہاز تیزی سے جھول رہا تھا اور میں گیجز کو بھی پڑھ نہیں پا رہا تھا۔‘

سیچوان ایئر لائن کے مسافر طیارے کو جب یہ حادثہ پیش آیا اس وقت جہاز میں مسافروں کو ناشتہ دیا جا رہا تھا اور اچانک جہاز 24 ہزار فٹ نیچے چلا گیا۔

ایک مسافر نے چین کی سرکاری نیوز سروس کو بتایا کہ ’ہمیں پتہ نہیں چلا کہ اچانک کیا ہوا ہے اور ہم پریشان ہو گئے۔ آکسیجن ماسک گر گئے۔ جہاز سنھبلنے کے بعد ایک اور مرتبہ نیچے آیا۔
 


جہاز میں سوار 119 افراد محفوظ رہے اور ہنگامی لینڈنگ کے بعد 27 افراد کا طبی معائنہ بھی کیا گیا۔

چین کی سول ایوی ایشن اتھارٹی کا کہنا ہے کہ اس حادثے میں معاون پائلٹ کو معمولی زخم آئے ہیں۔

سوشل میڈیا پر جہاز کے کپتان کو باحفاظت لینڈنگ کرانے پر بہت داد دی گئی۔ چین کی مقامی سوشل میڈیا کی ویب سائٹ پر چائنا ہیرو پائلٹ کا ہیش ٹیگ ٹرینڈ کر رہا ہے۔

جہاز ساز کمپنی ایئر بس کا کہنا ہے کہ وہ اس حادثے کی تحقیقات کے لیے اپنی ٹیم کو چین روانہ کر رہے ہیں۔


Partner Content: BBC URDU

Email
Rate it:
Share Comments Post Comments
15 May, 2018 Total Views: 2935 Print Article Print
NEXT 
Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.
A Chinese passenger jet was forced to make an emergency landing after the co-pilot was ‘sucked halfway out’ of the cockpit after the windscreen shattered in mid-air. Speaking to the Chengdu Economic Daily, Captain Liu Chuanjian said that the aircraft had just reached an altitude of 32,000 feet when the windscreen smashed.
MORE ON ARTICLES
MORE ON HAMARIWEB