نامہ بر تیرا میری جاں یہاں اب پہنچا ہے
Poet: Moeen Nizami
By: Momi, Gujar Khan

نامہ بر تیرا میری جاں یہاں اب پہنچا ہے
تیرے بیمار کا دم جب کہ بہ لب پہنچا ہے

خود بھی آ جا کہ میری جان میں جاں آ جائے
یوں تو درمان کا ہر ایک سبب پہنچا ہے

آخری وقت پہ آیا ہے عیادت کے لئے
پہلی بار آج یہاں حسب طلب پہنچا ہے

دم میں دم تھا تو نہ آیا وہ بلاوے پر بھی
دم نکلنے کو ہوا ہے تو عجب پہنچا ہے

میں دیا کرتا تھا من کو یہ تسلی لوگوں
پہنچا ہے صبر کرو یار بس اب پہنچا ہے

یوں تو ہر کام کا اک وقت متعین ہے معین
پھر بھی کیوں دیر سے پہنچا ہے وہ جب پہنچا ہے

Rate it: Views: 150 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 16 Aug, 2008
About the Author: Momi

Visit 2 Other Poetries by Momi »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.