ہماری ویب بن گئی ہے ہماری پہچان

(Ainee Niazi, Karachi)
ہماری ویب کی جانب سے دی گئی آرٹس کونسل کی تقریب کی خوبصورت یا وں کے سحر سے ہم نکل بھی نہ پائے تھے کہ مصدق صاحب کی جانب سے ایک میل کے ذر یعے پیغام پہنچا کہ ہماری ویب نے ایک مقامی ہوٹل میں ایک تقریب پر وقار کا اہتما م کر ڈالا ہے دعوت نا مہ میں تحریر تھا کہ یہ تقریب ملک کے مشہورو معروف دانشور ، شاعر ، استاد پروفیسر سحر انصاری کو حکو ت پا کستان کی جانب سے نشان امتیاز ملنے کی خوشی میں دی جا رہی ہے ساتھ ہی لگے ہا تھوں کچھ مزید قلم کا رو ں کی ای بک شائع کی گئی ہیں ان کی حو صلہ افزائی بھی کی جا ئے گی ہم دل ہی دل میں ابرار صا حب کی دریا دلی کے قا ئل ہوئے بناء نہ رہ سکے آج کے اس افرا تفری کے دور میں اردو اہل قلم سے اتنی محبت و احترام یقیناً قابل ستا ئش ہے ویسے تو در جنوں ویب سا ئٹ لکھنے وا لوں کیلئے مو جو د ہیں لیکن لکھاریوں کے لئے اتنی حو صلہ افزائی ان کی تمام تحریروں کو یکجا کرنا پھر ای بک بنا نا اور یہ بھی پیشکش کر نا کہ اگر آپ اسے شا ئع کروانا چا ہیں تو ہم مدد کریں گے ایسا کم ہی دیکھنے میں آتا ہے یقینا ہما ری ویب ہما ری پہچان بن گئی ہے جس پر ہمیں فخر ہے اس بات میں کو ئی دو رائے نہیں کہ ہما ری ویب نے ہرخبر کو جلد از جلد عوام تک پہچانے کا اہتمام کیا خواہ وہ جعل سازی ، رشوت ستا نی اور غبن کے وا قعات کا پردہ فا ش کر تا ہو سیا ست دا نوں کی اقربا پر وری ، سرکا ری افسروں کی غلط کا ریو ں کی تفصیلا ت ہو ں، قیدیوں ، یتیم خا نوں اورا سپتا لو ں میں مریضوں سے بد سلوکی کے و اقعات ہوں اس نے بناء کسی لگی لپٹی اسے عوام تک ذمہ داری سے پہنچا یا کہ سچ ہمیشہ سچ ہو تا ہے اور سچ بو لنے وا لا کبھی پشیمان نہیں ہو تا ہماری ویب نے اپنی ذمہ داری بطریق احسن پو ری کی ہے ہماری ویب نے بیک وقت اپنے قا رئین کو خبر کے ساتھ علم اور کھیل وتفریح سے بھی بہرہ ور کیا خا ندان کے تقریبا سبھی افراد کے لیے مقا لا ت ، فیچرز، اور دیگر تفریحی مواد ہما ری ویب کی ممتاز خصو صیت رہی ہے اس میں شا مل شو بز ، سا ئنس، طب حفظان صحت ،خا تون خا نہ دا ری ، نجوم ، شاعری، امتحا نی نتا ئج اورکھیلوں سے متعلق دیگر معلوماتی فیچرز ہماری ویب کے قا رئین کے لیے خا ص دلچسپی کا حامل رہا ہے ۔ گا ہے بگاہے یہ اپنے لکھنے والوں کو تحفے تحائف اور انعا مات بھی دیتے رہے ہیں -

بعض فیصلے انسانوں کے لئے کتنے مفید ہو تے ہیں اس کا ندازہ مجھے ہما ری ویب کے پلیٹ فار م کی کا میابی کو دیکھ کراکثر ہو تا ہے جب میں نے لکھنا شروع کیا تو کئی اخباروں کے ساتھ ہماری و یب میں بھی اپنی تحریر بھیجتی رہی ہماری ویب پر 15اکتوبر 2011ء کو میری پہلی تحریر شائع ہوئی اسی دوران مجھے ایک اور اردو ویب سائٹ کا علم ہوا تو میں نے وہاں بھی اپنے مضا مین بھیجے کچھ دنوں کے بعد اس ویب سائٹ نے میری تحر یریں شائع کرنی بندکردی جب میں نے وجہ پو چھی تو بتا یا گیا کہ آپ دوسری ویب پر لکھنابند کر دیں میں نے حیرانی سے پو چھا ایساکیوں کروں ، کہا گیابس ہما ری پا لیسی ہے ۔جب کہ ہما ری ویب نے کبھی ایسی کو ئی پا بندی نہیں عا ئد کی تھی میں نے ہما ری ویب کاانتخاب کیا اور اﷲ کا شکر ہے کہ اس نے میرے اس انتخاب کو عزت بھی بخشی مجھے بھی یہ فخر حا صل ہوا کہ اس نے اپنی پہلی ای بک تقریب میں مجھے شامل کیا میری تحر یروں کو پانچ سو صفحات کی ایک ای بک میں شا ئع کیا اوراس طرح پندرہ لکھا ریوں میں وا حد خاتون کا نا م شا مل ہوا شیلڈ سے نوازاجس کے لئے میں ابرار صا حب ، صمدانی صا حب ، عطا تبسم صا حب ، خوا جہ صدق صا حب اور دیگر ممبرز کی تہہ دل سے مشکور ہوں۔

ہماری ویب سے ہم سب لکھاری جو کہ اب را ئٹرز کلب کے ممبر بن چکے ہیں ایک اوربھی اعزاز حاصل ہوا ہے کہ پاکستان کے مایہ ناز عالم و فاضل سپوت پرو فیسر سحر انصاری کے زیر سایہ ہم سب کو کچھ سیکھنے کامو قع ملے گا ان سے ملا قات کا شرف حاصل ہوگا رئیس صمدانی صا حب جن کے لب و لہجے سے علم جھلکتا ہے جنھوں نے اپنے علم کے دروازے ہر نئے طا لب علم کے لئے کھلے رکھے ہیں ان کی ذات ہم سب کے لئے لا ئق ستا ئش ہیں عطا تبسم جو اپنے نام کی طرح خوبصورت تبسم کے ساتھ ہمیشہ بڑی عزت ووقار سے ملتے ہیں جن کی خو بصورت کمپیر نگ سننے کو ہم سب ہمہ تن گوش ہو جا تے ہیں ہماری ویب کے روح رواں ابرار صاحب جن کے د م قدم سے ہماری ویب کے چمن میں بہار ہے یقینا ان کی کاوش قا بل رشک ہے اردو کواتنی تعظیم وتکریم عطا کی لکھنے والوں کو ایک بہترین پلیٹ فار م دیا جہاں اب روزانہ ستر ہزار قاری اس ویب سا ئٹس کو وزٹ کرتے ہیں سالا نہ دو کروڑ چالیس لاکھ ویزیٹررز استفادہ کرتے ہیں جن کی تعداد دن بدن بڑھتی جا رہی ہے کئی بڑے نام آہستہ آہستہ اس آٹھ سالہ پودے کا حصہ بنتے جا رہے ہیں اور میری دعا ہے کہ ایک دن یہ تناآور درخت بن کر اردو کے گلستان میں اپنی پہچان بنائے آمین۔ اور پھر دور کھڑے بابائے اردو مولوی عبدالحق کی روح اس درخت کی بہار کو دیکھ کر مطمن ہو کہ ابرار صا حب و دیگر قلم کاروں نے اپنا کچھ تو فرض نبھایا بلکل اس چڑیا کی مانند جو آگ بھجانے کی خاطر اپنی چو نچ میں پانی کا ایک قطرہ لئے سعی کرتی ہے۔
Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 1244 Print Article Print
About the Author: Ainee Niazi

Read More Articles by Ainee Niazi: 143 Articles with 73293 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Masha Allah bohoth hi khoobsurath andaaz may hamari web ka taruf likha hay ...beshak hamariweb jis terha apnay likhariyon ko promote ker rahi hay apnay channel per wo khabl-e-tareef hay...... jo izath or takreem humay is website nay di wo kissi or website per kabhi nahi milli ..... kabhi nashaista comments is site per daikhay agar ghulti say post bhi hogai to delete kerdiyai gai ......... or aap ko bhi bohoth mubarak baad dair say article parha hay is liyai late reply ker rahi hun .......... Allah aap or deegar writers ko or kamiyabi ata fermai ameen............. Jazak allah Hu Khairan Kaseera
By: farah ejaz, Aaronsburg on Feb, 27 2016
Reply Reply
0 Like
You are right.right. Hamari Web and the Writer Club has given us a great respect and an identity in the society with a union of millions of new thoughts,skills,vision and a spirit to join hands with the deprived youth for a better tomorrow.
A few people might have not taken it so novel and a great initiative in the field of education and awareness of the people and the communities at large at first but now with the passage of time they have realized it a major source of making the society issues resolved and a close contact with the district management and the district judiciary, the tow components to ensure the people access to justice to each and guaranteeing the delivery of services to the community people.We mostly forget about the real and the factual realities of the society with a view that more than 90 % problems of our communities are linked with the fair,free and transparent performance of the district management for which we mostly talk about in our TV shows and other programmes. In my opinion it a highly valuable forum to resolve the communities issues and have the best performance of the government with a loving and harmonious environment.
By: Mohammad, Rawalpindi on Feb, 06 2016
Reply Reply
0 Like
بہت خوب تحریر اس لیے نہیں کہ آپ نے میری بھی تعریف فرمائی ہے بلکہ تحریر کو پڑھ کر محسوس ہوتا ہے کہ کوئی پختہ لکھری سرپٹ دوڑا چلا جارہ ہے،آپ کے خیالات سچائی پر مبنی ہیں۔ ہماری ویب اور رائیٹرز کلب کے ساتھ اسی طرح جڑی رہیے۔ اور لکھتی رہیے۔ جب، جہاں اور جیسے موقع ملے ہماری ویب اور رائیٹرز کلب کی تشہیر اور اس کے اچھے کاموں کو اجاگر کرنے کی کوشش کریں۔ بہت شکریہ
By: Dr Rais Ahmed Samdani, Karachi on Nov, 29 2015
Reply Reply
0 Like
بہت ہی سادہ مگربہت ہی پروقار انداز میں ہماری ویب اور ہماری ویب را ئٹرز کلب کا تعارف کرانے پر آپکو دل گہرایوں سے مبارک باد۔ آپکے اس مضمون کے توسط سے مییں یہ کہنا چاہونگا کہ را ئٹرز کلب ہماری ویب پر لکھنے والوں کا ایک خاندان ہے جس میں سب اپنی اپنی ذمہ داریاں احسن طریقے سے نباہ رہے ہیں۔ اس مضمون کے لکھنے کےلیے آپکا بہت بہت شکریہ۔
By: Syed Anwer Mahmood, Karachi on Nov, 26 2015
Reply Reply
0 Like
VERY GOOD ARTICLE
AND ALSO CONGRATS FOR PARTICIPATION THAT BEAUTIFUL EVENT WHICH I MISSED AND DOUBLE CONGRATS FOR BE THE E-BOOK HOLDER
BE SUCCEED HAPPY AND BLESSED ALWAYS
By: uzma ahmad, Lahore on Nov, 24 2015
Reply Reply
0 Like
Language: