دنیا کے 81 فی صد بچے جسمانی مشقت نہیں کرتے: عالمی ادارہ صحت

ویب ڈیسک — 

عالمی ادارہ صحت نے اپنی ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ دنیا بھر میں ہر پانچ میں سے چار نو عمر لڑکے اور لڑکیاں مناسب جسمانی ورزش نہیں کرتے جو ان کی صحت کے لیے بہت ضروری ہے۔

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) نے جمعے کو جاری کردہ ایک رپورٹ میں اس بات پر زور دیا ہے کہ نو عمر بچوں کو اسکرینوں سے ہٹا کر جسمانی مشقت کی عادت ڈالی جائے جب کہ لڑکیوں کو لڑکوں کے مقابلے میں زیادہ جسمانی ورزش کی ضرورت ہے۔

یہ رپورٹ 2001 سے 2016 کے درمیان کیے جانے والے سروے کے نتائج پر مرتب کی گئی ہے۔ یہ سروے دنیا کے 146 ملکوں کے 16 لاکھ طلبہ پر کیا گیا جن کی عمریں 11 سے 17 برس کے درمیان تھیں۔

رپورٹ کے مطابق نتائج سے معلوم ہوا ہے کہ 81 فی صد بچے عالمی ادارہ صحت کے مجوزہ اصول یعنی دن میں کم از کم ایک گھنٹہ کوئی جسمانی مشقت (پیدل چلنا، کھیلنا، سائیکل چلانا یا کھیلوں میں حصہ لینا وغیرہ) پر عمل نہیں کرتے۔

عالمی ادارہ صحت کے مطابق یہ انتہائی توجہ طلب مسئلہ ہے کیوں کہ اچھی صحت کے لیے روز جسمانی ورزش بہت ضروری ہے اور یہ دل کی بیماریوں سے بھی تحفظ فراہم کرتی ہے۔

تحقیق میں معلوم ہوا ہے کہ گزشتہ پندرہ برسوں میں اس صورتِ حال میں کوئی تبدیلی نہیں آئی۔

ریسرچ کی مصنفہ لیان ریلی نے کہا ہے کہ ایسا لگتا ہے کہ الیکٹرونک انقلاب نے نو عمر بچوں کی زندگی کے طریقوں کو اور ان کی حرکات کو بدل کر رکھ دیا ہے۔ لیان ریلی کے بقول یہ انقلاب بچوں کو ایک جگہ بیٹھنے پر مائل کر رہا ہے اور ان میں جسمانی ورزش کی عادت کو کم کر رہا ہے۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.