اسموگ کا تدارک، بھٹے مالکان کو قرضے دئے جائیں گے

صوبائی وزیر برائے ای پی ڈی ایم رضوان نے کہا ہے کہ اینٹوں کے بھٹوں کے مالکان کو فضائی آلودگی پر قابو پانے کے لئے نئی ٹیکنالوجی کے استعمال کی تربیت دینے کی ضرورت ہے ، خاص طور پر اسموگ کے عنصر ، جو ماحول کو بری طرح متاثر کر چکے ہیں ، جبکہ اس میں آلودگی کی سب سے بڑی وجہ ملک گاڑیوں سے دھویں کا اخراج ہے اور اس کو کم کرنے کے لئے بھی اقدامات کیے جارہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھٹوں کی بندش یا ملازمتوں کا خاتمہ ہمارا ایجنڈا نہیں ہے شاید پی ٹی آئی کی حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ بھٹوں کے مالکان کو نئی ٹیکنالوجی میں آگے بڑھنے میں مدد کے لئے آسان شرائط پر قرضہ دیا جائے گا اور امید ہے کہ یورو پیٹرول کے استعمال کے لئے لاہور اور پنجاب کے دیگر بڑے شہروں میں دھواں کے اخراج کو کم کرے گا۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کو یہاں ماحولیاتی کمیٹی روم میں ایک اعلی سطحی محکمانہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔سکریٹری ای پی ڈی سلیمان اعزاز نے وزیر کو بریفنگ دی کہ ماحولیات کی صورتحال کا جائزہ لینے کے لئے لاہور ، گوجرانوالہ ، فیصل آباد اور ملتان میں اسٹیشنز کام کررہی ہیں جبکہ اضلاع یا تحصیل سطح پر زیگ زگ ٹیکنالوجی متعارف کروائی جارہی ہے اور تمام بھٹوں کو زگ میں منتقل کرنے کے لئے اہم اقدامات اٹھائے جارہے ہیں۔

ڈی جی ماحولیات تنویر وڑائچ نے بتایا کہ جلتی ہوئی فصلوں کی باقیات یا کوڑے دان وغیرہ کی دفعہ 144 کے تحت سخت ممانعت کو یقینی بنایا جارہا ہے ، جبکہ ملکی تاریخ میں پہلی بار لاہور میں مقبوضہ مافیا سے حاصل کی گئی 2500 ایکڑ اراضی پر جنگل قائم کیا جائے گا۔

اسموگ کا بے رحم حملہ، بچاؤ کے طریقے جاننا ضروری ہے

 گرین پاکستان کی مہم کے بارے میں عوام میں مختلف آگاہی مہم چلائی جارہی ہے ، جبکہ پانی اور ہوا صاف رکھنے کے لئے ای پی اے ایجنسی اس مقصد کے لئے پوری کوشش کر رہی ہے اور اب تک ، لاہور میں نیوز ٹیکنالوجی میں 63 بھٹے منتقل ہوچکے ہیں ، جبکہ 96 بھٹوں کو عارضی طور پر منتقل کردیا گیا ہے۔

20 دسمبر تک کام کرنا چھوڑ دیا۔اینٹوں کے بھٹوں کے تمام مالکان کو متنبہ کیا گیا ہے کہ وہ نئی ٹیکنالوجی کی طرف چلیں بصورت دیگر مزید کام کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ انہوں نے مزید بتایا کہ معزز لاہور ہائیکورٹ کے قائم کردہ کمیشن نے گذشتہ روز ایل سی سی آئی میں صنعتوں کے نمائندوں سے ملاقات کی اور ماحولیاتی آلودگی پر قابو پانے کے لئے ایس او پیز کو اپنانے کی ہدایت کی۔

وزیر موصوف نے محکمہ کی طرف سے کی جانے والی کاوشوں کو سراہا اور کہا کہ اسموگ نے ​​روز مرہ کی زندگی کو بری طرح متاثر کیا ہے ، لہذا اس کو روکنے کے لئے ایک پائیدار پالیسی بنائی جائے گی۔ ا

نہوں نے زور دے کر کہا کہ پاکستان کے مستقبل کو محفوظ بنانے کے لئے درختوں کے کاٹنے کے عمل کو ہر قیمت پر روکنا ہوگا جبکہ سموگ جیسے مسئلے کو حل کرنے کے لئے پلانٹ فار پاکستان مہم کو کامیاب ہونا پڑے گا۔ اس موقع پر محکمہ کے تمام متعلقہ افسران موجود تھے۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.