اپنی واحد مثال ہم آپ رکھتے ھیں

Poet:
By: Abdul Wahid, Lahore

تجھے آنسوں کے بغیر ھی رلا دوں
عشق ایسا لا زوال ھم رکھتے ھیں

نظریں جو ملاؤں تو چیر دیں تمھیں
آنکھ میں ایسی تیز دھار ہم رکھتے ھیں

تم جو نہ ھو دل میں تو چیر دیں اسے
دیکھ لےپیار جو بےشمار ہم کرتے ھیں

ڈرتے ھیں کہیں تم پاگل نہ ھو جاؤ
پیار اپنا سنبھال کے ہم رکھتے ھیں

خوب احساس ھے تجھے دیے دکھوں کا
تیرے سامنے سر جھکا کے ہم چلتے ھیں

تو پھلی محبت ھے اسی لیے خاص ھے ورنہ
آنکھیں اور بھی چار ھم سے رکھتے ھیں

اتنا نظر انداز نہ کرنا کہ روٹھ جایں ہم
بے رخی میں نام اپنا ھم رکھتے ہیں

بدلنا چاہو گے بھی بدل نہ پاو گے
محبت میں اثر کمال کا ھم رکھتے ہیں

امید ھے یہ پڑھ کے لگ جاو گی سینے سے
خوش فھمی ھی سھی ھاں ھم رکھتے ھیں

گفتار کا تو یہ آلم کہ بس کیا کھیے
الفاظ تو الفاظ لھجہ کمال ھم رکھتے ھیں

کیسا پیار ھےمیرا اپنے در و دیوار سے پوچھ
وہ اپنے اندر آنکھوں دیکھا حال رکھتے ھیں

Rate it:
06 Dec, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Abdul Wahid
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City