جن کی چاہت کی آرزو کی تھی

Poet: UA
By: UA, Lahore

جن کی چاہت کی آرزو کی تھی
جن کو پانے کی جستجو کی تھی
جن کو چاہا کِئے وفاؤں میں
جن کو مانگا کئے دعاؤں میں
انہی سے دور ہو گئے کیونکر
بھلا مجبور ہو گئے کیونکر
اپنی قسمت میں تنہائی لکھی تھی
مقدر میں ہی جدائی لکھی تھی
درد بڑھتا ہی گیا جسقدر دوا کی
دور ہوتے گئے ہم جسقدر دعا کی تھی
کوئی نہ کوئی تو حکمت ہوگی
اس میں بھی کوئی مصلحت ہوگیا
اپنی قسمت سے بھلا کیا لڑنا
اور مقدر سے گِلہ کیا کرنا
درد سہنا ہے اور جِینا ہے
ہنس کے یہ زہر ہمیں پِینا ہے
بھول جائیں گے جستجوکی تھی
تمہیں پانے کی آرزو کی تھی
کوئی پوچھے بھی تو ہے چپ رہنا
عرضِ حال ان سے بھی نہیں کہنا
جن کی چاہت کی آرزو کی تھی
جن کو پانے کی جستجو کی تھی
 

Rate it:
30 Dec, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: uzma ahmad
sb sy pehly insan phr Musalman and then Pakistani
broad minded, friendly, want living just a normal simple happy and calm life.
tmam dunia mein amn
.. View More
Visit 3106 Other Poetries by uzma ahmad »

Reviews & Comments

اس میں بھی کوئی مصلحت ہوگی

By: Uzma, Lahore on Jan, 08 2020

درد بڑھتا ہی گیا جسقدر دوا کی
دور ہوتے گئے ہم جسقدر دعا کی

By: Uzma, Lahore on Jan, 03 2020

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City