روح کی بے چینی

Poet: شفق
By: Shafaq, Lahore

اس کے جانے پر بے چینی کیوں ہے
خواہش ہے یہ دل میں کیسی
اتنی چاہت اس کے لیے دل میں کیوں ہے
پرواہ نہیں اس کو یہ جتلایا تھا
مگر دل کو صرف اس کی پرواہ کیوں ہے
وہ کچھ نہیں میرا نہ کوئی تعلق اس سے
پھر بھی اس سے اتنی اپنایت کس لیے
دیکھ کر اس کو روح کی بے چینی
چھو لے وہ ایک بار ایسی آرزو کیوں ہے
بھیڑ ہے لوگوں کی آس پاس
دل میں میرے تنہائی کیوں
جا رہا وہ واپس اپنی منزل۔ کو
روکنے کی اس کو تمنا کیوں ہے

Rate it:
20 Feb, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Shafaq
Visit 57 Other Poetries by Shafaq »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City