کیا کہوں کیا لِکھوں

Poet: Saleem Ishrat Hashmi
By: سلیم عشرت ھاشمی, Karachi

تری آنکھوں میں جو اک لمحہ ستارے چمکے
درد کےعنواں سب ہی دل میں ہمارے دمکے
درماںِ غم ترا گرچہ مرے پاس نہیں
یہ اُداسی بھی تری ہمیں راس نہیں
رات بھرکُھرچتی ر ہی روح کو اس غم کی کسک
تری آنکھوں کا نمک
ترے ہونٹوں کی رمق
جنبش بازو کا یہ سفر کیسا ہے
رہ معلوم نہیں رہگزر کیسا ہے
آبلہ پا ہو تم تو شکستہ پا ہم بھی ہیں
نگار خانہِ دل میں تو تنہا سب ہی ہیں
بھٹکتے ہم بھی ہیں غم کے دالانوں میں
گو گھِرے رہتے ہیں ہمہ وقت اُجالوں میں
اک بے نام اُداسی ذات میں بستی ہے
کوئ انجانی خلش ہر آن ہمیں ڈستی ہے
کوئ آواز خیالوں میں ہم کو بھی ستاتی ہے
کچھ زخموں کی چمک جاں کوکرچاتی ہے
کیوں اداس ہو بے وجہ پریشاں تم ہو
ان دیکھےاندیشوں سےہلکاں تم ہو
یہ جو آج ہے کل کسی طور نہ رہ پائے گا
وقت کے دھارے کوگزرنا ہے گزر جائیگا
ان شمع فروزاں میں گہر کہاں جچتے ہیں
ان آنکھوں میں تو جُگنو ہی بھلے لگتے ہیں
جگنو ہی بھلے لگتے ہیں

Rate it:
27 Mar, 2020

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: سلیم عشرت ھاشمی
Visit 6 Other Poetries by سلیم عشرت ھاشمی »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

What an absolute heart touching poetry!🌈✨😍

By: Ifrah, Karachi on May, 20 2020

Great Poetry

By: Ahmad , Sargodha on Apr, 12 2020

Amazing!

By: Suma, Karachi on Apr, 03 2020

Wow! Excellent

By: Suma, karachi on Apr, 03 2020

Wow! Excellent

By: Suma, karachi on Apr, 03 2020

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City