Add Poetry

تم اس خرابے میں چار چھ دن ٹہل گئی ہو

Poet: عمیر نجمی By: Zaid, Karachi
Tum Is Kharab Mein Chaar Chay Din Tehel Gayi Ho

تم اس خرابے میں چار چھ دن ٹہل گئی ہو
سو عین ممکن ہے دل کی حالت بدل گئی ہو

تمام دن اس دعا میں کٹتا ہے کچھ دنوں سے
میں جاؤں کمرے میں تو اداسی نکل گئی ہو

کسی کے آنے پہ ایسے ہلچل ہوئی ہے مجھ میں
خموش جنگل میں جیسے بندوق چل گئی ہو

یہ نہ ہو گر میں ہلوں تو گرنے لگے برادہ
دکھوں کی دیمک بدن کی لکڑی نگل گئی ہو

یہ چھوٹے چھوٹے کئی حوادث جو ہو رہے ہیں
کسی کے سر سے بڑی مصیبت نہ ٹل گئی ہو

ہمارا ملبہ ہمارے قدموں میں آ گرا ہے
پلیٹ میں جیسے موم بتی پگھل گئی ہو

Rate it:
Views: 660
29 Mar, 2021
Related Tags on Umair Najmi Poetry
Load More Tags
More Umair Najmi Poetry
Popular Poetries
View More Poetries
Famous Poets
View More Poets