اسلام کیا سکھاتا ہے۔۔۔۔؟(پارٹ سوم)

(Naila Rani, karachi)

دوستوں۔۔۔۔۔!!!اسلام ہمیں سکھاتا ہے کہ۔۔۔۔۔اپنے والدین کو اف تک نہ کریں ۔۔۔۔۔جب وہ بڑھاپے کی عمر میں پہنچ جائیں ۔۔۔۔۔انکی عزت اور احترام کریں ۔۔۔۔انکی نافرمانی اسلام میں حرام ہے۔۔۔۔۔ان سے ایسا برتاٶکریں کہ وہ آپکے روئیے آپکی عادات اور آپکے کردار پر فخر کریں۔۔۔۔۔انکی فرمانبرداری انکا احترام ان سے محبت انکی عزت کرنا ہم پر واجب ہے ۔۔۔۔۔اور اسکے صلے میں ہمیں کیا ملے گا ۔۔۔۔؟والدین کی خدمت کے صلے میں جنت کا وعدہ اللہ نے کر رکھا ہے ۔۔۔۔۔۔یعنی کہ تھوڑی سی مشقت کے بعد جنت جیسا تحفہ آپکو مل رہا ہے ۔۔۔۔۔اور جنت ایک ایسی جگہ ہے۔۔۔۔۔۔جہاں نہ کو ئی دکھ ہے ۔۔۔۔نہ کوئی آزمائش ہے ۔۔۔۔نہ کو ئی خوف ہے ۔۔۔۔اور کسی قسم کی مشقت کرنے کی ضرورت ہوگی ۔۔۔۔۔۔وہ ایک ایسی جگہ ہے جہاں آپ کی خواہشات دل میں پیدا ہونے سے پہلے پوری کر دی جائیں گی ۔۔۔۔۔جنت وہ مقام ہے جہاں پہنچ کر انسان کو اللہ کے دیدار کے علاوہ ۔۔۔۔۔۔کسی اور چیز کی خواہش نہ ہوگی ۔۔۔۔اور وہ جنت ماں کے قدموں تلے ہے اور اس جنت کا دروازہ باپ ہے۔۔۔۔۔۔۔بس ماں باپ کو راضی رکھنا ہے۔۔۔۔۔جنت کا وعدہ آپ سے اس نیکی پر کیا گیا ہے ۔۔۔۔۔اسلام ہمیں سکھاتا ہے کہ۔۔۔۔۔بلوغت کی عمر کے بعد جب بچہ ہوش سنبھال لے اور اپنے پیروں پر کھڑا ہو جائے یا جب ایک لڑکا یا لڑکی ۔۔۔۔۔۔اپنے آپ اور گھر بار سنبھالنے کے قابل ہو جائے ۔۔۔۔اور وہ شعور کی منزل پر قدم رکھ دے تو اسکا فورا نکاح کر دیا جائے ۔۔۔۔۔جس سے زناکاری میں اضافہ نہ ہوگا ۔۔۔۔۔بلکہ اگر اس بات کو سمجھ لیا جائے تو۔۔۔۔۔زنا کا خاتمہ یقینی بنایا جا سکتا ہے ۔۔۔۔معاشرے میں برائی فطرت کے اصولوں کو توڑ کر ہی جنم لیتی ہے ۔۔۔۔۔آجکل نکاح کو اتنا مشکل بنا دیا گیا ہے اور۔۔۔۔۔زنا کو اتنا آسان کہ۔۔۔۔۔اب نوجوانوں میں خاص طور پر نکاح کی بجائے زنا کو زیادہ فروغ مل رہا ہے۔۔۔۔۔اور نکاح کے بعد اللہ نے میاں بیوی کے ایک دوسرے پر بہت سے حقوق واجب کر دئیے ہیں ۔۔۔۔۔جنہیں ادا کرنے کے بعد گھر جنت بنایا جا سکتا ہے۔۔۔۔۔اللہ نے یہ بھی بتا دیا ہے کہ میاں بیوی ایک دوسرے کا لباس ہیں ۔۔۔۔۔یعنی کہ ایک دوسرے کا اتنا خیال رکھا جائے ۔۔۔۔۔جتنا کہ انسان اپنے لباس کا خیال رکھتا ہے۔۔۔۔اور ایک دوسرے کے راز لوگوں کے سامنے افشاں نہ کرے صرف اتنی سی بات سمجھ لینےکے بعد۔۔۔۔۔۔گھر جنت بن سکتا ہے کہ میاں بیوی ایک دوسرے کا لباس ہیں ۔۔۔۔۔یہ ایک مکمل اور واضح مثال اللہ نے قرآن میں دی ہے۔۔۔۔۔۔اسلام ہمیں سکھاتا ہےکہ۔۔۔۔۔ایسے غریب لوگ جو کہ اپنی عزت رکھنے کے لیئیے دوسروں کے سامنے ہاتھ نہیں پھیلاتے ۔۔۔۔جو سفید پوش لوگ ہوتے ہیں انکا بے حد خیال رکھا جائے ۔۔۔۔مالدار لوگ ایسے لوگوں پر اپنامال خرچ کریں انھیں تلاش کر کے انکی مدد کی جائے ۔۔۔۔۔۔اسکے علاوہ یتیموں اور فقیروں اور مسکینوں اور غریب رشتے داروں اور غریب پڑوسیوں کابھی آپ پر حق ہے۔۔۔۔۔آپ اپنے رشتے داروں سے انکی غربت کی وجہ سے نہ تو ۔۔۔۔۔قطع تعلق کر سکتے ہیں اور نہ ہی انھیں کسی قسم کی اذیت پہنچا سکتے ہیں ۔۔۔۔۔ان چیزوں کا اللہ آخرت کے دن آپ سے حساب ضرور لے گا۔۔۔۔اسلام ہمیں سکھاتا ہے کہ ۔۔۔۔کہ ہمارے اندر رحموکرم۔۔۔۔صبروبرداشت اوردر گزر کا مادہ ہونا چاہیئیے۔۔۔۔یعنی کہ طبعیت میں نرمی اور معاف کر دینے کی صفت ہو نی چاہیے مسلمان سب آپس میں بھائی بھائی ہیں انھیں مل جل کر رہنا چاہیئیے۔۔۔۔۔۔۔ایک اچھا مسلمان وہ ہے جس کے ہاتھ زبان سے کسی دوسرے مسلمان کو ایذا یا تکلیف نہ پہنچے ۔۔۔۔یہاں تک کہ کسی غیر مسلم کی دلازاری کرنا بھی اسلام میں گناہ ہے ۔۔۔۔۔۔نہ صرف انسانوں بلکہ جانوروں اور پودوں کا بھی خیال رکھنے کی اسلام ہمیں تعلیم دیتا ہے۔۔۔۔۔اور جو اسلام پر عمل کرے گا اور اسلام کی بتائی ہوئی باتوں پر عمل کرے گا اسے بدلے میں جنت ملے گی ۔۔۔۔۔وہ جنت جسمیں نہ کوئی غم ہے نہ آزمائش۔۔۔۔۔وہ جنت جو نہ کسی آنکھ نے دیکھی ہے اور نہ ہی اسکا تصور ہی کوئی پیش کر سکا ہے ۔۔۔۔۔۔۔جاری ہے

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: naila rani riasat ali

Read More Articles by naila rani riasat ali: 104 Articles with 108732 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
01 Mar, 2018 Views: 1286

Comments

آپ کی رائے
BUT the matter of fact is that we often ignore the sacrifices of our parents. i met a worried mother three days ago. she was describing entire story of his son. her eyes was full of tears by telling that her son tried to murder her.
By: Ain ul Noor Javed, Islamabad on Mar, 01 2018
Reply Reply
0 Like
such people do not follow islam
By: naila, karachi on Mar, 02 2018
0 Like
such people do not follow islam
By: naila, karachi on Mar, 02 2018
0 Like

مزہبی کالم نگاری میں لکھنے اور تبصرہ کرنے والے احباب سے گزارش ہے کہ دوسرے مسالک کا احترام کرتے ہوئے تنقیدی الفاظ اور تبصروں سے گریز فرمائیں - شکریہ