کتاب اﷲ٬ آفاقی سچائیاں اور آیات اﷲ پر انسانی رد عمل

(M.N.Khalid Major, Islamabad )
Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 577 Print Article Print
About the Author: Khalid.Naeemuddin

Read More Articles by Khalid.Naeemuddin: 92 Articles with 58078 views »
My Blog:
http://ufaq-kay-par.blogspot.com/

My Face Book Link:
https://www.facebook.com/groups/tadabbar/

" أَفَلاَ يَتَدَبَّرُونَ الْقُرْآنَ وَ
.. View More

Reviews & Comments

أَهْلِ الكتاب , الكتاب Please ponder on these two words, because these are just like البيت , أَهْلَ الْبَيْتِ
By: M.N.Khalid, Islamabad on Jan, 08 2011
Reply Reply
0 Like
سورہ العمران ٣ --------آیہ # ١١٠ تا ١١١
تم بہتر ہو ان سب امتوں میں جو لوگوں میں ظاہر ہوئیں بھلائی کا حکم دیتے ہو اور برائی سے منع کرتے ہو اور الله پر ایمان رکھتے ہو اور اگر کتابی ایمان لاتے تو ان کا بھلا تھا ان میں کچھ مسلمان ہیں اور زیادہ کافر - وہ تمہارا کچھ نہ بگاڑیں گے مگر یہی ستانا اور اگر تم سے لڑیں تو تمھارے سامنے سے پیٹھ پھیر جائینگے پھر ان کی مدد نہ ہوگی ..،...


سورہ العمران ٣ -----آیہ # ١١٣ تا ١١٤
سب ایک سے نہیں کتابیوں میں کچھ وہ ہیں کہ حق پر قائم ہیں اور الله کی آیتیں پڑھتے ہیں رات کی گھڑیوں میں اور سجدہ کرتے ہیں - الله اور پچھلے دن پر ایمان لاتے ہیں اور بھلائی کا حکم دیتے اور برائی سے منع کرتے ہیں اور نیک کاموں پر دوڑتے ہیں اور یہ لوگ لائق ہیں ....
By: mohsin khan, islamabad on Jan, 07 2011
Reply Reply
0 Like
Dear Mohsin Khan, Good, But who will fulfill this condition...?

اور ان سے پوچھو جو ہم نے تم سے پہلے رسول بھیجے کیا ہم نے رحمان کے سوا کچھ اور خدا ٹھرائے جن کو پوجا ہو
By: M.N.Khalid, Islamabad on Jan, 06 2011
Reply Reply
0 Like
سورہ الزخرف ٤٣ ---------------------- آیہ # ٤٣-٤٤- ٤٥
تو مظبوط تھامے رہو اسے جو تمہاری طرف وحی کی گئی بیشک تم سیدھی راہ پر ہو - اور بیشک وہ شرف ہے تمھارے لئیے اور تمہاری قوم کے لئیے - اور عنقریب تم سے پوچھا جائیگا اور ان سے پوچھو جو ہم نے تم سے پہلے رسول بھیجے کیا ہم نے رحمان کے سوا کچھہ اور خدا ٹھراے جن کو پوجا ہو
By: mohsin khan, islamabad on Jan, 06 2011
Reply Reply
0 Like
ALLAH o Akbar
By: mohsin khan, islamabad on Jan, 05 2011
Reply Reply
0 Like
Language:    

مزہبی کالم نگاری میں لکھنے اور تبصرہ کرنے والے احباب سے گزارش ہے کہ دوسرے مسالک کا احترام کرتے ہوئے تنقیدی الفاظ اور تبصروں سے گریز فرمائیں - شکریہ