عورت مارچ... تمھیں اِس سے کیا

(علی راج, Karachi)

مذہبی ذہن اور لبرل مائنڈ سیٹ کا کبھی آپس میں اتفاق ہوا ہے جو آج ہوگا؟ دونوں اپنی اپنی زندگی جئیں ایک دوسرے کی زندگیوں میں جھانکنا ایک دوسرے پر لعنت ملامت کرنا کیا ضروری ہے.

تم چاہے دوپٹہ پہنو...
وہ چاہے بےپردہ پھرے تمھیں اِس سے کیا

تم خود کو آدھا سمجھو...
وہ خود کو پوری بتائے تمھیں اِس سے کیا

تم جسم کو جتنا مرضی ڈھانپو...
اُسکا جسم اُسکی مرضی تمھیں اس سے کیا

تم تو سامنے سے ہی بلاؤ...
وہ جہاں سے چایے بلائے تمھیں اِس سے کیا

تم اپنے دن چھپاؤ...
وہ جسے چاہے بتاتی پھرے تمھیں اِس سے کیا

تم کچن میں ہانڈی چڑھاؤ...
وہ گاڑی کا ٹائر بدلے تمھیں اُس سے کیا

تمھیں شوہر مہربان ملا شکر مناؤ...
وہ گھٹیا مردوں سے اپنی جان چھڑائےتمھیں اس سے کیا

تم چاہے جیسی خود پر حدیں لگاؤ...
وہ ہر حد پار کرجائے تمھیں اِس سے کیا

تم ریوڑ میں ہانکی جاؤ...
وہ بھیڑیوں کے درمیان اپنا وقت گزارے تمھیں اِس سے کیا

تم جو کہتے ہو وہ سچ میں بن کے دکھاؤ...
وہ چاہے گمراہ کہلائے تمھیں اِس سے کیا

(از قلم علی راج)
 

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 635 Print Article Print
About the Author: علی راج

Read More Articles by علی راج: 127 Articles with 62519 views »
کالم نگار/بلاگر.. View More

Reviews & Comments

Language: