لفظ

(Sara Rahman, LQP)
لفظوں کی تاثیر کو جان لینے والی قوموں کا مقدر بدل جاتا ہے۔۔۔

یہ لفظ ۔۔۔

لفظوں کو لفظ سمجھ کر آگے بڑھ جانے والے کبھی لفظوں کی تا ثیر نہیں جان پاتے ۔۔۔۔۔۔۔لفظوں کےگھاٶ کا نشانہ بننے والے ہی ۔۔۔ان کی طاقت کا اندازہ کر سکتے ہیں ۔۔۔۔منصور ابن ہلاج ۔۔کے من میں کوٸ جھانک نہیں آیا تھا ۔۔۔۔اس کا عشق جب الفاظ کی صورت اس کی زبان سے عیاں ہوا ۔۔۔لوگ نہ سمجھ سکے ۔۔اسے کافر سمجھ کے سولی پر چڑھا دیا گیا ۔۔۔۔
یہی لفظ جب ایک قلم کار کے قلم سے نکلتے ہیں تو ان کی سچاٸ قوموں کے مقدروں کو بدل دیتی ہے۔۔۔۔
یہی لفظ جب کسی غدار کے لبوں سے ادا ہوتے ہیں ۔۔۔۔تو زندگیاں برباد کر دیتے ہیں ۔۔۔۔
لفظ تو لفظ ہوتے ہیں ۔۔۔جس طرح سوچ کی کوٸ سرحدیں نہیں ہوتیں قانون نہیں ہوتے ۔۔۔۔الفاظ کی بھی کوٸ سرحد اور قانون نہیں ہوتا ۔۔۔
یہی لفظ ہیں ۔۔۔۔۔جو کسی کی غلامی کر لیں تو اسےبادشاہ بنا دیتے ہیں۔۔۔۔
۔۔۔
لفظوں کے سارے بندھن احساس کی نازک ڈوری سے بندھے ہوتے ہیں ۔۔۔لفظوں کی تلخی احساس کا خون کر سکتی ہے ۔۔۔لفظوں کی نرمی دلوں کےاونچے سنگھاسن پر اپنا قبضہ جما سکتی ہے۔۔۔
الفاظ کا چناٶ زندگیوں میں کامیابی کی ضمانت ہے ۔۔۔۔
شکستہ اور ٹوٹے دلوں پر محبت کا مرہم ہیں ۔۔۔
ہمیشہ نرم اچھے اور منافقت سے پاک لفظ استعمال کریں ۔۔من پاکیزہ اور صاف ہوگا ۔۔۔تو لفظ بھی پاکیزہ ہوگے۔۔۔
جو کہتے ہیں لفظوں کے سہارے زندگی نہیں جی جاسکتی ۔۔۔۔۔ان کو یہ کہنے کیلۓ لفظوں کا سہارا لینا پڑتا ہے ۔۔
اپنی بات دوسروں تک پہنچانے کا زریعہ لفظ ۔۔۔احساسات بیاں کرنے کا زریعہ لفظ ۔۔۔سچاٸ ظاہر کرنے کا زریعہ لفظ ۔۔۔اپنی بات منوانے کا زریعہ لفظ ۔۔۔لفظوں کی اہمیت سے کون انکار کر سکتا ہے ۔۔۔۔کیا کوٸ یہ کہہ سکتا ہے ۔۔۔۔لفظوں کے سہارے کے بغیر زندگی گزاری جاسکتی ہے۔۔۔
محبت بھی اظہار کی محتاج ہوتی ہے ۔۔۔۔۔۔نہیں تو اس جزبہ کی تاثیر ہی ختم ہو کر رہ جاتی ہے۔۔۔
خدارا ۔۔۔۔۔لفظوں کو اہمیت دو ۔۔۔۔لفظ جب اہم ہو جاٸیں گے ۔۔۔تو زندگیاں سنور جاٸیں گی ۔۔۔قوموں کا مقدر بدل جاۓ گا ۔۔۔۔۔
 

Rate it:
Share Comments Post Comments
Total Views: 292 Print Article Print
About the Author: Sara Rahman

Read More Articles by Sara Rahman: 11 Articles with 3688 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language: