آرٹیکل 149 اور کراچی کا ادھورا لطیفہ

(Muhammad Anwaar, Lahore)

ادھورا لطفیہ:
صاحب نے دفتر سے فارغ ہو کر نجی نجی کھیلنے کا سوچا
کال کر کے اسے پوش علاقے والے ’’تنہا‘‘ گھر میں آنے کا حکم دیا
وہ آج پھر تھکی تھکی ، خوفزدہ اور بے جان سا بت لگ رہی تھی
جوں جوں رات بوڑھی ہوتی گئی ، صاحب کی خواہشیں جوان ہوتی گئیں
پھر حقِ حکمرانی نے کوئی بھی فرض۔۔۔ قضا نہ کیا
صبح وہ اٹھی۔۔۔ جانے سے پہلے ایک بارپھر بولی ۔۔۔
’’صاحب پیسے ؟‘‘
’’اے پگلی! اب تجھ سے تو پیسے نہیں لوں گا۔۔۔ نا ‘‘
مکمل لطفیہ:
پگلی کراچی ہے اور صاحب ،،، ہر حاکم وقت

 

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: muhammad anwaar

Read More Articles by muhammad anwaar: 19 Articles with 5594 views »
H m anwaar, more than 15 years experience of TV journalism. Reporting,scripting, copy editing, idea generation, packaging, assignment, worked with Tel.. View More
15 Sep, 2019 Views: 182

Comments

آپ کی رائے