مراثی کا خواب

(Mian Khalid Jamil {Official}, Lahore)

ایک میراثی کو خواب آیا کہ اسکا ایک کمرا مٹھائی سے بھرا پڑا ہے اور وہ اس میں سے سارے خواب میں مٹھائی کھاتا رہا ۔ صبح اٹھا تو سوچا اب اتنی مٹھائی کا میں کیا کروں گا؟ ایسے تو یہ پڑی پڑی خراب ہوجائے گی وہ مسجد میں گیا اور اعلان کروا دیا کہ آج شام کو سارے گاوں کی گامے میراثی کے گھر دعوت ہے ۔ ہر بندہ حیران تھا کہ گھر گھر سے روٹیاں مانگنے والا آج پورے گاوں کی دعوت کررہا ہے؟

گاما میراثی گھر آیا تو اسکی بیوی نے کہا ابھی ابھی مسجد میں اعلان ہوا ہے گامے میراثی کے گھر دعوت ہے؟ گاما میراثی سینہ چوڑا کرکے بولا تو ہاں میں نے ہی اعلان کروایا ہے یہ جو اندر کمرا مٹھائی کا بھرا پڑا ہے اسکو کون کھائے گا؟ میں نے سوچا ویسے بھی اتنی مٹھائی خراب ہوجانی ہے چلو گاوں والوں کی دعوت کردیتا ہوں ساری عمر انکا کھایا ہے آج زرا اللہ نے سنی ہے تو انکو بھی کھلا دوں ۔ گامے کی بیوی نے جب تفصیل پوچھی تو اس نے اپنا خواب سنایا اسکی بیوی نے سر پکڑ لیا اور کہا جاو اندر کمرے میں جاکر دیکھو مٹھائی کہاں ہے؟ جب اس نے دیکھا تو کمرا خالی تھا ۔ بیچارا بڑا پریشان ہوا بہت سوچ بچار کے بعد بیوی کو کہا چلو کوئی گل نئی اللہ وارث اے تم ایسا کرو دریاں وغیرہ بچھا کر گاوں والوں کے بیٹھنے کا بندوبست کرو میں کچھ ارینج کرلونگا۔

جب شام ہوئی اور گاوں والے آنا شروع ہوگئے گاما ایک تولیہ صابن اور لوٹا لیکر دروازے کے پاس کھڑا ہوگیا جو بھی آتا وہ صابن سے اسکے ہاتھ دھلواتا اور تولیہ پیش کرتا ۔ آوجی ملک صاب ہتھ دھو لوُ ،آو جی رانا صاب ہتھ دھو لوُ ، آو جی چوہدری صاب ہتھ دھو لوُ ۔۔۔ غرض کہ پورے گاوں کے ہاتھ وغیرہ اچھی طرح دھلوا کر دریوں پہ بٹھا دیا ۔ سب لوگ حیران پریشان تھے کہ لگتا ہے گامے نے کوئی VIP بندوبست کیا ہے۔ کچھ دیر بعد گاما حسب عادت ہاتھ جوڑ کرسب کے سامنے کھڑا ہوگیا اور بولا : "چوہدری صاب، ملک صاب، رانا صاب تے سارے پنڈ والیو... میں اِینے جُوگا اِی سَاں"
(مطلب۔۔۔ میرے پاکستانیو۔۔۔ میری اتنی ہی حیثت تھی کہ بس ہاتھ ہی دھلوا سکتا تھا)

گامے مراثی کے خواب سے ایک سیاستدان یاد آگیا جو کہتا تھا۔۔ ایک کروڑ نوکریاں ، پچاس لاکھ گھر دوں گا۔۔۔ ڈالروں کی بارش ھوگی۔۔۔ سمندر سے گیس ، تیل اور بلوچستان سے سونے کے ذخائر برآمد ھو گئے۔۔ کسی کو چھوڑوں گا نہیں۔۔۔ قرضہ اور بھیک نہیں مانگوں گا۔۔ لوگ بیرون ملک سے نوکریاں مانگنے پاکستان آئیں گے۔۔۔ میرے پاس دو سو ایکسپرٹس کی ٹیم ھے۔۔۔ وغیرہ وغیرہ۔۔
خیر ۔۔۔
دن میں بار بار بیس سیکنڈ تک صابن سے ہاتھ دھوئیں ۔باقی اللہ بہتر کرے گا ۔
گامے میراثی کے بس میں اتنا ہی تھا
 

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Mian Khalid Jamil {Official}

Read More Articles by Mian Khalid Jamil {Official}: 331 Articles with 175708 views »
Professional columnist/ Political & Defence analyst / Researcher/ Script writer/ Economy expert/ Pak Army & ISI defender/ Electronic, Print, Social me.. View More
26 Apr, 2020 Views: 750

Comments

آپ کی رائے
Very good sir
By: Mian Imtiaz, Lahore on Apr, 28 2020
Reply Reply
3 Like