پاکستان اور مہنگائی

(Huda Irfan, karachi)
بچپن سے سنتے آرہے ہیں پاکستان میں مہنگائی بہت ہے غریب کے کھانے کے لیے روٹی نہیں ہے رمضان میں مہنگائی ڈبل ہو جاتی ہے۔

مگر میری سمجھ نہیں آتا کہ مہنگائی ہوتی کن لوگوں کے لیے ہے ۔ ان سیاستدانوں کےلیے جو عوام کا پیسا کھا کھا کے لڑ تے رہتے ہیں یا ان امیروں کیلیے جو اپنے گھروں میں اے سی اور ایل سی ڈی اسکرین کے ساتھ بیٹھے آرام فرما رہے ہوتے ہیں۔ یا پھر ان غریبوں کیلیے جو پورے رمضان صرف اس وجہ سے کام نہیں کرتے کیونکہ وہ روزے رکھ کر بہت تھک جاتے ہیں۔

اگر کام کرتے بھی ہیں تو منہ مانگے پیسے وصول کرتے ہیں۔

پاکستان میں ہر چھوٹے چھے سال کے بچے سے لے کر چالیس سال کے بوڑھے تک کے ہاتھ میں اینڈرائڈ فون نظر آتا ہے۔ گھروں کے باہر گاڑی کھڑی ہوتی ہے اور اندر اے سی لگے ہوتے ہیں اور سونے پہ سہاگہ بجلی چوری کی استعمال کرتے ہیں کیونکہ بجلی کا بل بہت زیادہ آتا ہے ارے بھئی مہنگائی ہے نہ پاکستان میں۔
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Huda Irfan

Read More Articles by Huda Irfan: 4 Articles with 1828 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
29 Jul, 2016 Views: 765

Comments

آپ کی رائے
آپ کی تحریر پڑھی ... کہیں متفق ، کہیں اختلاف رائے رکھتا ہوں
مگر ضروری سب سے اہم چیز ہے لکھنا اور اپنی بات کو احسن انداز
سے لوگوں تک پہنچانا ..... آپ نے مناسب انداز اپنایا اور
تحریر کو آلودہ ہونے نہیں دیا... امید کرتا ہوں لکھنے کا سلسلہ جاری
رکھیں گی، رہی بات وطن عزیز میں مہنگائی کی تو وہ ان لوگوں کے لئے
قطعی نہیں جن کا آپ نے ذکر کیا ہے اور درست کیا ہے ، مگر جن کا
ذکر نہیں ہوا ان کے لئے کل بھی مہنگائی تھی اور آج بھی
فقیر خود اس مہنگائی کے ہاتھوں پریشاں ہوکر اپنی کئی عادات کا گلہ
گھونٹ چکا ہے ..... یاد رکھیں پانچوں انگلیاں برابر نہیں ہوتیں
اس ہی طرح وطن عزیز میں بھی ایسے لوگ ہیں جن کا دامن، عمل ، مال
سیاہی سے محفوظ ہے ... اور ان کے لئے موبائل آج بھی عیاشی
کے سواء کچھ نہیں ....
لکھتی رہیں .... شاد و آباد رہیں ... آمین
By: Seen Noon Makhmoor (س ن مخمور), Karachi on Oct, 24 2016
Reply Reply
2 Like