"وزن کم کرنے کے تَیرہ طریقے (بغیر ڈائیٹنگ اور بغیر ورزش کے)"

(ابنِ منیب, سویڈن)
"وزن کم کرنے کے تَیرہ طریقے (بغیر ڈائیٹنگ اور بغیر ورزش کے)"

۱۔ کپڑے ڈھیلے پہنیں

۲۔ تصویر ہمیشہ دُور سے لیں اور کوشش کریں کہ پاس کوئی بڑی چیز جیسے بَس ٹرک یا بلند عمارت ہو-

۳۔ وزن کرتے ہوئے ہمیشہ ایک پاؤں زمین پر رکھیں (اور دوسرے سے سکیل کو دبائیں یہاں تک کہ سوئی آپ کے آج کے ہدف تک پہنچ جائے)-

۴۔ دُبلے پتلے اور خوراک کا خیال رکھنے والے دوستوں سے تعلقات توڑ دیں-

۵۔ خود کو یقین دلائیں کہ موٹاپے کا احساس صرف اور صرف آپ کے دماغ کی خرافات ہیں۔ روزانہ سو مرتبہ یہ وِرد کریں "آئی ایم بیوٹی فُل، آئی ایم پرفیکٹ"-

۶۔ گھر کے تمام آئینے باہر پھینک دیں-

۷۔ کھانے سے پہلے اور بعد میں خوب کھانا کھائیں تا کہ کھانے کے وقت بھوک کم لگے-

۸۔ کھانا ہمیشہ بہت زیادہ بنائیں تا کہ بچے ہوئے کھانے کو دیکھ کر یہی احساس ہو کہ کم کھایا-

۹- ڈاکٹر کو رشوت دے کر "مکمل صحتمندی" کا سرٹیفیکیٹ حاصل کریں-

۱۰۔ اپنے کمرے میں جگہ جگہ جاپانی پہلوانوں کے پوسٹر اور تصاویر آویزاں کریں-

۱۱۔ روزانہ متعدد بار ورزش سے بھاگیں۔ بقیہ اوقات میں ریلیکس کریں اور ورزش کا خیال دل میں نہ لائیں-

۱۲۔ موٹاپے کی طرف توجہ دلوانے والے دوستوں کو غلط وزن بتائیں اور اُنہیں اپنی آنکھیں چیک کروانے کا مشورہ دیں-

۱۳۔ کھاتے ہوئے یاد رکھیں کہ کم کھانے کی صورت میں جَلد ہی ایک شدید احساسِ محرومی آپ کو لاتعداد اشیائے خورد و نوش دیوانہ وار مُنہ میں ڈالنے پر مجبور کر سکتا ہے۔ ایک متوازن انسان کبھی ایسے احساسات کو قریب پھٹکنے نہیں دیتا۔ اور آپ تو ہیں ہی بیوٹی فُل، پرفیکٹ اور بیلینسڈ -

تحریر و تحقیق: ابنِ مُنیب
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Ibnay Muneeb

Read More Articles by Ibnay Muneeb: 54 Articles with 40371 views »
https://www.facebook.com/Ibnay.Muneeb.. View More
16 Aug, 2016 Views: 903

Comments

آپ کی رائے
I enjoyed it alot awlaaa
By: sana, Lahore on Aug, 19 2016
Reply Reply
0 Like
محترم جناب رانا صاحب، تحریر پر آپ کے سوا لاکھ سیر حاصل تبصرے نے بے حد محظوظ کیا۔ پیٹ اپنے ہی ٹوٹکوں پر عمل سے بھرا نہ ہوتا تو ہم یقیناََ لوٹ پوٹ بھی ہوتے۔ بچوں کی بات پر دل بھر آیا اور بے ساختہ دعا نکلی کہ اللہ تعالی آپ کا پھیلتا سایہ سدا قائم و دائم رکھے۔
By: Ibnay Muneeb, Lahore on Aug, 18 2016
Reply Reply
0 Like

یہ قلمی شہ پارہ مزاحیہ ادب کی کیٹگری کے تحت شائع ہؤا ہے اسلئے عنوان پر نظر پڑتے ہی اتنا تو اندازہ ہو گیا تھا کہ ضرور کچھ نامعقول اور ناقابل قبول قسم کی پھلجھڑیاں چھوڑی گئی ہونگی ۔ اور حسب توقع ایسا ہی ہؤا ۔ نہایت ہی اعلا چارپائے میں تحریرکردہ اس ، صحت کو تین تیرہ کر دینے والے نسخہ جات ہائے گنج گراں مایہ میں 7 ویں نمبر پر جو گل افشانی فرمائی گئی ہے وہ موتیوں میں تولے جانے کے لائق ہے ۔ کاش ہم اس پر عمل پیرا ہو سکتے مگر کیا کریں اپنے بچوں کا خیال آ جاتا ہے جن کے چھوٹے چھوٹے سے ماں باپ ہیں جنہیں کھانے کے لئے نہیں زندہ رہنے کے لئے کھانا ہے ۔ اسی طرح 9 ویں نمبر پر جو گرانقدر مشورہ دیا گیا ہے وہ تاریخ میں سنہرے الفاظ سے لکھے جانے کا مستحق ہے ۔ دوستوں سے جان چھڑانے کی ترکیبوں کا بھی جواب نہیں ۔ بس جس کسی کو بھی حلال خودکشی کا شوق ہو وہ ابنِ منیب کے ان مفت کے مشوروں پر عمل کرے وزن کم ہو نہ ہو بندہ ضرور اس دار فانی سے کم ہو جائے گا ۔
By: Rana Tabassum Pasha(Daur), Dallas, USA on Aug, 17 2016
Reply Reply
1 Like