7 ستمبر یوم ختم نبوت

(Fatima Ishrat, )
محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی محبت دین حق کی شرط اول ہے
اسی میں ہو اگر خامی تو سب کچھ نامکمل ہے
7 ستمبر ہماری تاریخ کا سب سے روشن دن ہے ..اس دن کو ہماری قومی وملی تاریخ میں خا ص اہمیت حا صل ہے... یہ دن ہر اک مسلمان کیلئے گراں مایہ ہے.. اس دن اک ایسا گروہ کا تختہ الٹ دیا گیا جس نے اسلام کا لبادہ اوڑھ کر مسلمانوں کو سخت اذیت پھنچائ...مسلمانو ں کی انتھک محنت اور قربانیوں کا صلہ یوں مل سکا ک وقت کی قومی اسمبلی نے قادنیوں...مرزائیوں. احمدی ...کو آئینی ترمیم کے ذریعہ جمہوری اور پار لیمانی بنیاد,پر غیر مسلم قرار دے دیا گیا...سب سے پھلے علامہ اقبال نے قادنیوں کو غیر مسلم اقلیت قرار دینے کا محتاط مطالبہ کیا تھا...
"قادنیت کے متعلق میرا ہمیشہ سے خیال ہے کہ اسے شعوری طور پر وہی قبول کرسکتا ہے جو یا تو اچھا خاصہ غبی ہو یا پھر اس سے کوئ مفاد اس طرف لے جائے". .(پروفیسر خورشید احمد )
بلا شبہ مرزاقادیانی اک مردود شخص رہا جس نے سوائے غلاظت کے اور کچھ نھیں پھیلایا...جس کا ہر اک قدم گندگی کو اضافہ کرتا گیا ایسے شخص کو جتنا ملعون وملامت کیا جائے کم ہے...
"مرزا قادیانی عیار ترین شخص تھا جو تمام عمر گرگٹ کی طرح رنگ بدلتا رہا"
(اشتیاق احمد)
ایسے شخص کا نبوت کا دعوی کرنا خود اک انتہائ گھٹیا فعل تھا..جس پے جتنی لعنت بھیجی جائے وہ کم ہے....قادیانی کو اک الگ قوم ٹہرائے جانا انتہائ ضروری تھا..کیونک ان کے قول وفعل نے یہ ثابت کردیا تھا کہ وہ الگ قوم کی حیثیت رکھتے تھے...
"مرزا قادیانی کمبخت ایسا بدنصیب کافر اور مردود تھا کہ وہ رحمت عالم صلی اللہ علیہ وسلم کی مسند پر قدم رکھنے کا
مدعی تھا یہ سوچ آتے ہی مجھ پے سکتہ طاری ہوجاتا ہے کہ ابو جہل سے بڑے کافر بھی دنیا میں ہوئے ہیں "
(حضرت مولانا عبدالوہاب)
اپنے مذہب کا تحفظ اور پیغمبر اسلام صلی اللہ علیہ وسلم کی عزت و ناموس کا دفاع کرنا مسلمانوں کا دینی، شرعی ،اخلاقی اور قانونی حق ہے... ہمارے پیارے نبی پاک صلی اللہ علیہ وسلم آخری نبی ہیں ان کے بعد کو ئ نبی نھیں آئیگا..اس پے ہر مومن کا پختہ ایمان ہے اور عقیدہ ختم نبوت کی حفاظت ہمارا اولین فرض اور جو بہی اسکی طرف میلی نگاہ سے دیکھا گا...اسکا حشر کردینگے.. .
"جو شخص بھی ختم نبوت کی طرف میلی آنکھ سے دیکھے گا ہم اس پر قہر الہی اار صدیق ابو بکر رضی اللہ عنہ کا انتقام بن کے ٹوٹ پڑیں گے"
(سید عطا اللہ بخاری)
نبی پاک صلی اللہ علیہ وسلم پے ہمارے ماں باپ سب قربان...مگر اپنے نبی پے آنچ بھی نہ آنے دینگے...ختم نبوت ہماری زندگی میں سانس کادرجہ رکھتا ہے جس کے ٹوٹتے ہی زندگی ختم ہوجاتی ہے اسکے بناہ زندگی جینے کا نہ کوئ مزہ ہے نہ معنی....
"عقیدہ ختم نبوت پر ہماری فنا وبقا کا دارومدار ہے اس عقیدے کو نظر انداز کرنا اپنی شہ رگ کو کاٹنا ہے"
(مفتی حسن صاحب)
ہمارے پیارےآقا صلی اللہ علیہ وسلم کی ختم نبوت سے ہی دنیامیں ایمان اور فیروزی ہے
قبر میں بھی مومن کہتا ہے
"نبی محمد صلی اللہ علیہ وسلم (الحدیث)
حشر میں بھی لوگ آپ صلی اللہ علیہ وسلم سے شفاعت کی استدعا کرتے ہوئے کھیں گے
" اے محمد صلی اللہ علیہ وسلم آپ اللہ کے رسول اور آخری نبی ہیں " (الحدیث)
آج کے دن ہم یہ عہد کرتے ہیں کہ جب بھی جہاں کوئ منکر ختم نبوت سر اٹھائے گا.... اس کے سر کو تن سے جدا کر نے میں اک منٹ بہی ضائع نھیں کرینگے اور ہر طر ح کی قربانی دینے کیلئے ہر وقت تیار رہینگے....ہمارے خون کا اک اک قطرہ اک قطرہ بھی ختم نبوت کیلئے ہمیشہ حا ضر رہیگا..اور اسکی مکمل پاسداری کرینگے.... ان شاءاللہ.. اللہ تعالی ہمیں قبول فرمائے آمین.. ...
میراختم نبوت پے ایمان ہے
میرا سب کچھ انہی پر ہی قربان ہے
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: Fatima Ishrat

Read More Articles by Fatima Ishrat: 30 Articles with 19783 views »
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
12 Sep, 2016 Views: 385

Comments

آپ کی رائے

مزہبی کالم نگاری میں لکھنے اور تبصرہ کرنے والے احباب سے گزارش ہے کہ دوسرے مسالک کا احترام کرتے ہوئے تنقیدی الفاظ اور تبصروں سے گریز فرمائیں - شکریہ