سو لفظی کہانی... گناہ

(Imran Ahmed Rajput, Hyderabad)
بھائی میں جانا چاہتی ہوں...
پاگل ہو کیا... ارے یہ بہت بڑا گناہ ہے
وہ تمھیں چھوڑ چکا ہے.
لیکن بھائی ایک فتوے کے مطابق تجدیدِ نکاح کی گنجائش ہے.
نہیں یہ سب جھوٹ ہے...بکواس ہے
دیکھو دنیا کے چکر میں اپنی آخرت خراب مت کرو...یہ سب زنا کے زمرے میں آئیگا.
لوگ تمھارے پاس بیٹھنا پسند نہیں کریں گے... جو تمھارے پاس بیٹھے گا وہ سب گناہ گار ٹھہریں گے.
بہن مایوس ہوکر پلٹ جاتی ہے...
بھائی کے موبائل کی بیل بجتی ہے...
ہیلو... یار بندی اور جگہ کا انتظام ہوگیا ہے... بس تو آدھے گھنٹے میں پہنچ
آتا ہوں... بھائی یہ کہہ کر کال اینڈ کردیتا ہے...!
Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: علی راج

Read More Articles by علی راج: 127 Articles with 72731 views »
کالم نگار/بلاگر.. View More
19 Oct, 2016 Views: 1146

Comments

آپ کی رائے
But khoobsurat tehrir mashre ki haqiqat biyan ki he
By: Jawed Hanif, Karachi on Nov, 04 2016
Reply Reply
0 Like
اففف دردناک ہمارے معاشرے کی عورت
By: مہربانو, میرپورخاص on Oct, 21 2016
Reply Reply
0 Like
عورت کے لیے لمحہ فکریہ ہے
By: رخسانہ شیخ, لاہور on Oct, 21 2016
Reply Reply
0 Like
بہت زبردست تحریر
By: اصغر علی زیدی, کراچی on Oct, 21 2016
Reply Reply
0 Like
یہ شخص ہر تحریر کو مذہب سے جوڑدیتا ہے او بھائی سب کے اپنے اپنے عقیدے ہیں
By: سلیم خاصخیلی , سکھر, سندھ, پاکستان on Oct, 20 2016
Reply Reply
0 Like
رونا آتا ہے ایسی خواتین پر ارے بھائی سے پوچھنے کی ضرورت کیا ہے تمھاری اپنی زندگی ہے جیسے چاہو گزارو ہر انسان کو اپنی زندگی خود جینے کا حق ہے. کسی کے سہارے پڑے رہنے سے بہتر ہے اپنی زندگی خود جی جائے
By: فاطمہ دستگیر , کراچی on Oct, 20 2016
Reply Reply
0 Like
Buhat hi alaaaaaa
By: Amjad Ali, Karachi on Oct, 20 2016
Reply Reply
0 Like
Very true
By: Shahid Khan, Karachi on Oct, 20 2016
Reply Reply
0 Like
hm Acha hy
By: Azhar-ul-Hassan, Islamabad on Oct, 20 2016
Reply Reply
0 Like
Very true and attractive story , unfortunately its real face of our culture
By: Muhammad Arshad Qureshi (Arshi), Karachi on Oct, 20 2016
Reply Reply
0 Like
عورت کے ساتھ ہونے والی ناانصافی کو بہت عمدہ طریقے سے اجاگر کیا ہے
By: دانیال بیگ, کراچی on Oct, 20 2016
Reply Reply
0 Like
واہ راجپوت حقیقت کھول کر رکھ دی تم واقعی جہاد کررہے ہو حق باطل کے درمیان اللہ تمھیں اپنی حفظ وامان میں رکھے آمین
By: قاسم سفیر, لاہور on Oct, 20 2016
Reply Reply
0 Like
مسلکوں کی الجھنوں کا شکار معاشرے کی خواتینوں پر ایک عمدہ تحریر
By: میاں بشیر احمد, ملتان on Oct, 20 2016
Reply Reply
0 Like
اس بندے کو مذہب سے خدا واسطے کا بیر ہے
By: شائستہ انوار, لاہور on Oct, 20 2016
Reply Reply
0 Like
Imran ki har tehrir inqalabi tehrir hoti he bhut zabardat likhta he
By: Heena Naz, Karachi on Oct, 20 2016
Reply Reply
0 Like