شرف مشتری

(M.A.Shami, lahore)
Astrology and occult science

سیارہ مشتری مال و دولت کا سیارہ ہے۔ وہ تمام افراد جو مالی لحاظ سے تنگدستی ،قرض اور دیگر معاشی مسائل کا شکار ہیں اگر ان کے پیدائشی زائچوں کا تجزیہ کیا جائے تو ان میں سے اکثر کا مشتری ناقص ہوگا۔ مشتری برج جدلی میں حالت ہبوط میں ہوتا ہے۔

”شرف مشتری“
سیارہ مشتری مال و دولت کا سیارہ ہے۔ وہ تمام افراد جو مالی لحاظ سے تنگدستی ،قرض اور دیگر معاشی مسائل کا شکار ہیں اگر ان کے پیدائشی زائچوں کا تجزیہ کیا جائے تو ان میں سے اکثر کا مشتری ناقص ہوگا۔ مشتری برج جدلی میں حالت ہبوط میں ہوتا ہے۔ جوزا اور سنبلہ میں حالت وبال میں ہوتا ہے سنبلہ اور حمل میں حالت حضیض میں ہوتا ہے۔ پیدائشی زائچوں میں ان نحوست کی کمی کرنے کیلئے مشتری کی لوح اس کی حالت شرف میں تیار کی جاتی ہے مشتری کا شرف برج سرطان میں ہوتا ہے اس سال یہ شرف یکم ستمبر 2013ء کو آرہا ہے۔
ویدک آسٹرالوجی کے مطابق جن کے پیدائشی زائچے میں مشتری (Malefic) ہے یا نحس نظرات کا شکار ہے یا وہ صاحب زائچہ جو مشتری کی نحس مہادشا یا انتراشا کا شکارہیں ان کے لئے بھی یہ شرف مشتری اُمید کی کرن ہے اور وہ اپنی مشتری کی نحوست کی کاٹ اس شرف مشتری میں کرواسکتے ہیں اور عزت و دولت کے بند دروازے کو کھول سکتے ہیں۔

(شرف مشتری کی سائنٹیفک اہمیت)
کائنات میں بہت سی مخفی قوتیں کاریگر ہیں جوکہ حواس خمسہ سے ماورا ہیں لیکن جب کسی عمل یا مشاہدے کا بار بار کسی خاص وقت پر وقوع پذیر ہونا اس کو ایک سائنس قرار دیتا ہے۔
یعنی جب بھی ہم ہائیڈروجن اور آکسیجن کو ایک خاص ترتیب اور حالات میں آپس میں ملائیں گے تو نتیجہ پانی بنے گا اسی طرح شرف مشتری کے وقوع پذیر ہونے سے کائنات میں مثبت روحانی قوتیں ارتکار حاصل کرلیتی ہیں اور جب اس مثبت توانائی کو مخصوص طریقے سے کسی شے پر مرتکز کرکے منتقل کرلیا جاتا ہے تو وہ شے بھی اس (Positive Energy) کا منبہ بن جاتی ہے اور جس کے پاس یہ شے ہوگی وہ فرد بھی ایک (Positve aura) میں شامل ہوجائے گا اس (Positive eura) کو حاصل کرنے کیلئے لوح شرف مشتری خاص روحانی عمل کرکے تیار کی جاتی ہے۔

شرف مشتری کیا ہے؟
شرف مشتری ایک خاص وقت ہے جب مال و دولت اور عزت کا سیارہ برج سرطان میں (15.5) درجے پر آتا ہے تو کائنات میں اپنی سعد لہریں چھوڑتا ہے ہر سعد لہر میں اک خاص عمل کے ذریعے لوح پر منتقل کی جاتی ہیں اور اس لوح کو لوح شرف مشتری کہا جاتا ہے یہ لوح صدیوں سے عزت مال و دولت ترقی کامیابی اور ہر نیک مقصد کیلئے مجرب سمجھی جاتی ہے پہلے دور میں یہ الواح صرف بادشاہوں، امراء اور رئیسوں کے پاس ہوتی تھی اب علم و فن کے عروج کی وجہ سے یہ عام فرد کی دسترس میں بھی ہے۔

(لوح شرف مشتری) بنانے کا طریقہ
مشتری کو برج سرطان میں شرف حاصل ہوتا ہے جب یہ سیارہ طاقت اور روحانی شعاعیں نظام فلک میں چھوڑتا ہے اس وقت تیار کردہ الواح نقوش انگوٹھیاں لاکٹ اور دیگر روحانی مجراتِ خاص اہمیت کے حامل ہوتے ہیں۔ لوح شرف مشتری کا خاص وقت یکم ستمبر 2013ءء میں آرہا ہے۔ اس وقت میں حاملیں اور کاملیں چاندی اور سونے پر شرف مشتری کا خاص نقش کندہ کرتے ہیں۔ یہ خصوصی لوح آپ ہمارے ادارے سے بھی حاصل کرسکتے ہیں۔
پروفیسر ایم اے شامی نقشبندی صاحب اس خاص روحانی موقع پر خاندان شامی نقشبندی کا مجرب نقش مبارک ساعت میں اپنے دست شفاء سے بناتے ہیں۔ تاکہ وہ تمام بہن بھائی جو معاشرے میں عزت مال و دولت شہرت ترقی بلند منصب اعلیٰ حکام سے تعلقات اور تبادلہ کرنا چاہتے ہیں یا قرض اور دیگر معاشی پریشانیوں سے نجات چاہتے ہیں وہ اپنے نیک مقاصد میں کامیاب ہوجائیں گے۔ انشاء اللہ! وہ بہنیں اور بیٹیاں جوکہ بندش رشتہ کی وجہ سے گھروں میں بیٹھی ہوتی ہیں انشاء اللہ اس لوح کی روحانی طاقت سے اپنی گھر والی ہوجائیں گی۔
اچھے رشتے آئیں گے جو گھر ازدواجی مشکلات، لڑائی جھگڑوں کا شکار ہیں۔ وہ انشاء اللہ پرسکونی اور خوشحالی کا گہوارہ بن جائیں گے۔ زمین جائیداد کاروبار چل پڑے گا ہر طرح کی کاروباری بندش کی کاٹ ہوجائے گی غیب سے رزق کا سبب پیدا ہوگا۔ وہ گھر جو جادو ٹونے اور کالے علم کاشکار ہیں جہاں نحوست جادو بیماری لڑائی جھگڑا نفرت مقدمہ بازی ختم نہیں ہوتی۔ وہاں شرف مشتری کی بابرکت لوح سے شفاء ہی شفاء ہوگی مقدمہ بازی امتحان میں ترقی۔
بیرون ملک سفر انعامی بانڈ کا نکلنا ڈوبی ہوئی رقم کا ملنا غرض ہر نیک مقاصد میں کامیابی کیلئے لوح شرف مشتری اکسیر ہے۔
(لوح شرف مشتری بنانے کا طریقہ)
-1 لوح جو بھی بنائے نماز پنجگانہ اور شریعت کا پابند ہو حلال کماتا ہو حلال کھاتا ہو روحانیت میں یقین کامل رکھتا ہو۔
-2 قوائد و عملیات سے مکمل واقف ہو۔
-3 برج، طالع، نظریات، سعد نحس، رجال الفیبا، غرض تمام علوم پر حاوی ہو۔

-4 لوح کندہ کرنے سے پہلے مکمل تخلیہ ہونا چاہیے مشرتی کا بخور، عود، کافور جلاتا ہے۔
-5 وقت مخصوص آنے سے پہلے

Comments Print Article Print
 PREVIOUS
NEXT 
About the Author: M.A.Shami
Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
01 Oct, 2017 Views: 451

Comments

آپ کی رائے